دہشت گردی کو اسلام سے جوڑنا غلط/ عیسائيوں میں بھی انتہا پسند گروہ ہیں

کیٹیگری دنیا
Monday, 01 August 2016


کیتھولک عیسائیوں کے روحانی پیشوا پوپ فرانسس نے دہشت گردی اور اسلام کے درمیان موازنہ کو غلط قراردیتے ہوئےکہا ہےکہ دہشت گردوں کا اسلامی تعلیمات سے کوئی تعلق نہیں ،ہر مذہب میں انتہا پسند گروہ موجود ہوتے ہیں اور شدت پسندگروہ عیسائیوں میں بھی موجود ہیں ۔ پولینڈ کے دورے سے واپسی پر اپنے طیارے میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پوپ فرانسس کا کہنا تھا کہ اسلام اور تشدد کا آپس میں کوئی تعلق نہیں ہے ، اسلام کا تشدد سے موازنہ کرنا درست نہیں ہے ۔
انہوں نے کہا کہ عیسائی بھی اتنے ہی خطرناک اور مہلک ہوسکتے ہیں ۔ انہوں نے خبردار کیا کہ یورپ نوجوانوں کو دہشت گردی کی جانب دھکیل رہا ہے ۔
ان کا کہنا تھا ہر مذہب میں اس طرح کے بنیاد پرست عناصر محدود تعداد میں ہوتے ہیں ۔ اس طرح کے عناصر عیسائیوں میں بھی ہیں اور اگر میں اسلامی شدت پسندی کے بارے میں بات کروں تو پھر مجھے عیسائی شدت پسندوں کے بارے میں بھی بات کرنا ہوگی ۔ انہوں نے متنبہ کیا کہ یورپ میں جاری سماجی ناانصافیاں نوجوانوں کو اسلحہ اٹھانے اور شدت پسندی کی راہ پر ڈال رہی ہیں۔پوپ فرانسس کا کہنا تھا کہ ہم نے اپنے کتنے یورپی نوجوانوں کو بغیر کام کے چھوڑ رکھا ہے جو منشیات، شراب نوشی اور شدت پسند گروہ کی جانب مائل ہوئے ہیں اس لئے اس بات کو نہیں بھولنا چاہیئے کہ دہشت گردی تب جنم لیتی ہے جب کوئی دوسرا راستہ نہ ہو۔

پڑھا گیا 596 دفعہ

Leave a comment

شیعہ نسل کشی رپورٹ

Shia Genocide 2016

حلب میں داعش کو شکست

حلب شام میں داعش کو شکست فاش کی لمحہ بہ لمحہ خبریں

اسلام و پاکستان دشمن مفتی نعیم

Mufti Naeem

مقبوضہ کشمیر و فلسطین

Follow

Facebook

ڈیلی موشن

سوشل میڈیا لنکس

ہم سے رابطہ

ایمیل: This email address is being protected from spambots. You need JavaScript enabled to view it.

ویبسائٹ http://www.shiitenews.org