ایران میں امریکی ،اسرائیلی و سعودی پروجیکٹ ناکام، آل سعود کے لاکھوں ڈالر ڈوب گئے

کیٹیگری مقالہ جات
Thursday, 04 January 2018


یوں لگتا ہے کہ ایران میں ہونے والے چند ہنگاموں سے صرف ٹرمپ ہی نے بڑی بڑی امیدیں نہیں لگارکھی تھیں کہ فورا ٹیوئٹ کرڈالا اور ان انتہائی چھوٹے چھوٹے چند احتجاج نما ہنگاموں کی حمایت کرڈالی
ایسی کچھ صورتحال عربی میڈیا کی رہی ہے کہ اس نے ان چند احتجاجات اور جلاو گیراو کو فورا انقلاب اور ایرانی بہارuprising کا نام دینے لگے اور بڑی بڑی سرخیاں لگائیں کہ ایران میں انقلاب آرہا ہے
بات صرف یہاں تک نہیں رہی کیونکہ یہ میڈیا دیکھ رہا تھا کہ انہیں منظم انداز سے موصول ہونے والی وڈیوز اور تصاویر میں توڑ پھوڑ اور جلاو گھیراو کی فوٹیج تو تھیں لیکن کہیں پر بھی چند ہزار افراد پر مشتمل احتجاج ،دھرنا یا ریلیاں دیکھائی نہیں دے رہی تھیں کہ کم ازکم ایران میںعوامی انقلاب یا ایرانی بہار جیسی سرخیوں پر پورا اترے ۔
عرب میڈیا اور ٹرمپ کے انتہائی قریب سمجھے جانے والے ٹیوٹر اکاونٹ نے اس کمی کو پورا کرنے کے لئے اس سوشل میڈیا کا رخ کرناشروع کردیا کہ جہاں ہرقسم کی وڈیوز ایران میں حکومت مخالف مظاہرے کے نام سے پوسٹ ہورہی تھیں یہاں تک کہ اسپین کی پولیس کی ایک وڈیو جو کہ کٹلونیا مظاہرے کے دوران کی تھی جسے ایرانی پولیس کے طور پر پوسٹ کی گئی تھی کہ جہاں اسپینش زبان میں پولیزیا اور اپس منظر میں آنے والے اپینش آوازیں واضح تھیں
دلچسب صورتحال اس وقت پیدا ہونے لگی جبکہ سعودی ولی عہد شہزادہ بن سلمان سے تعلق رکھنے والی چینل العربیہ نے ایک ایسی وڈیو نشر کی کہ جسے مخصوص عرب و بیرون ملک بیٹھے ایرانی ہزاروں کی تعداد میں مسلسل لائیک اور پوسٹ کررہے تھے کہ جس میں دیکھاجاسکتا ہے کہ کئی کلومیٹر طویل ایک شاہراہ پر لاکھوں کی تعداد میں عوام مظاہرہ کررہی ہے
لیکن کچھ دیر میں خود عرب دیگر میڈیا اور سنجیدہ سوشل میڈیا نے واضح کردیا کہ یہ وڈیو سن 2011میں بحرین میں جمہوریت کی خاطر کئے جانے والے ملین مارچ ہے جیسے ایرانی عوام کا مارچ بناکر پیش کیا جارہا ہے
شائد العربیہ جیسے چینل کو اس بات کی جھوٹی امید لگی ہوئی تھی کہ عراقی کردستان کے اربیل شہر کے آپریشن روم میں بیٹھے افراد نے کروڑوں ڈالر کے ایرانی حکومت مخالف پروجیکٹ کو کامیاب بنایا ہے کہ جس میں سعودی تیل کا پیشہ لگا ہوا ہے
شائد اس آپریشن روم میں بیٹھے سعودی ،امریکی اسرائیلی اور ایرانی مجاہدین خلق کے تھینک ٹینک نے یہ یقین دلایا تھا کہ وہ ایران میں بھی شام و لیبیا جیسی صورتحال پیدا کرسکتے ہیں لیکن چند روز گذرنے کے بعد بھی صورتحال اس کے مطابق نظر نہیں آئی تو وہ اپنے بڑوں کو فیگ وڈیوز دیکھانے لگے تاکہ اس پروجیکٹ کے بل مکمل طور پر وصول کئے جاسکیں
جلد ہی اہم زرائع ابلاغ اور ٹیوٹر ہینڈلز نے اس جھوٹ کا بھانڈا پھوڑ دیا ۔
مشرق وسطی کاتاریخ شناس اور پروفیسر مارک اوون جونزنے زیل کی ٹیویٹ کرکے العربیہ اور ٹرمپ کے حامیوں کی امیدوں پر پانی پھیر دیا
@marcowenjones
The 'top tweet' when I search for Iran on Twitter is fake news, because it's a video purporting to be a protest in Iran that is in fact a protest from #Bahrain. Also, it's tweeted by a dodgy looking pro-Trump account. Original protest: https://www.youtube.com/watch?v=-qe3Z9hqEbw … #IranProtests
دلچسب بات یہ ہے کہ گذشتہ سات سالوں سے بحرینی عوام کے اس ملین مارچ کی وڈیو یوٹیوب پر موجود تھی کہ جیسے صرف بیس ہزار افراد دیکھ چکے تھے لیکن جوں ہی ٹرمپ کے حامی ٹیوٹر اکاونٹس نے اسے ٹیویٹ کیا تو اس کو دیکھنے والوں کی تعداد دس لاکھ سے تجاز کرگئی
شائد یہ بحرینی عوام کی وہ آواز تھی جسے دبایا گیا تھا اور آج قدرت نے اسے اس بہانے موقع فراہم کیا کہ دنیا دیکھے کہ جب بادشاہوں اور ڈکٹیٹر حکومتوں کیخلاف عوام اٹھتی تو کیسے اٹھتی ہے
ہمیں پورا یقین ہے کہ ایران میں چند ہزار بلوائیوں اور شرپسندوں پر کل یا پرسوں تک کنٹرول کیا جائے گا جیسا کہ کہا جارہا ہے کہ ایرانی سیکوریٹی فورسز کی جانب سے تھوڑی بہت ڈیل دینے کا ایک سبب ان افراد کی شناخت ہے جو کردستان کے شہر اربیل کے آپریشن روم سے کنٹرول ہورہے ہیں ۔
شہزادہ محمد بن سلمان کی شائد یہ بدقسمتی ہے کہ وہ جہاں ہاتھ ڈالتا ہے وہاں ساری تدبیریں الٹی پڑ جاتی ہیں شام ،عراق یمن اور خود اپنے ملک میں وہ مسلسل ناکام دیکھائی دیتے ہیں اب ایک اور کروڑوں ڈالر ایک پروجیکٹ ناکامی سے دوچار ہے
یورپی زرائع بلاغ اس کی شخصیت کی نفسیاتی کیفت کے بارے سچ کہتے ہیں کہ وہ ایک گھمنڈ اور کینہ توز شخص ہے جو آخر میں جاکر دیوارسے اپنا سر ٹکرادے گا

پڑھا گیا 1203 دفعہ

Leave a comment

شیعہ نسل کشی رپورٹ

Shia Genocide 2016

حلب میں داعش کو شکست

حلب شام میں داعش کو شکست فاش کی لمحہ بہ لمحہ خبریں

اسلام و پاکستان دشمن مفتی نعیم

Mufti Naeem

مقبوضہ کشمیر و فلسطین

فلسطینی عوام کا واپسی مارچ جاری رکھنے کا اعلان

فلسطینی عوام کا واپسی مارچ جاری رکھنے کا اعلان

فلسطین انفارمیشن سینٹر کے مطابق وزارت صحت کی جاری کردہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اسرائیلی فوج کی وحشیانہ جارحیت میں شہید ہونے والوں میں تیرہ بچے بھی ش...

مقالہ جات

صدی کی سب سے بڑی ڈیل کیا ہے؟

صدی کی سب سے بڑی ڈیل کیا ہے؟

صدی کی سب سے بڑی ڈیل در حقیقت مسئلہ فلسطین کے حل کے لئے ایک نیا نقطہ نظرہے جسے امریکی صدر ٹرمپ نے پیش کیا ہے اور اس نقطہ نظر کو امریکی اتحادی عرب ممال...

Follow

Facebook

ڈیلی موشن

سوشل میڈیا لنکس

ہم سے رابطہ

ایمیل: This email address is being protected from spambots. You need JavaScript enabled to view it.

ویبسائٹ http://www.shiitenews.org