فلسطینی قیدیوں کو پھانسی دینے کا قانون انسانی حقوق کی کھلی خلاف ورزی

کیٹیگری مقبوضہ فلسطین
Monday, 08 January 2018


فلسطینی قیدیوں کے امور کی نگراں کمیٹی کے سربراہ عیسی قراقع نے کہا ہے کہ صہیونی کینسٹ کی جانب سے فلسطینی قیدیوں کو پھانسی دینے کے حوالے سے قانون کی مقدماتی موافقت سمیت دیگر مجرمانہ قوانین جو گزشتہ دو سال کے دوران وضع کی گئی ہیں، اسرائیلی کی وحشیانہ پالیسیوں کو برملا کرتے ہیں جس کے باعث اس رژیم کی نسل پرستی اور دہشتگردی پر مبنی آئیڈیالوجی بھی عروج پر دیکھنے میں آتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ قانون بین الاقوامی انسانی حقوق کے قوانین اور جینیوا کنونشن کی کھلی خلاف ورزی ہے کہ جس کے مطابق صہیونی جیلوں میں پابند سلاسل فلسطینی قیدیوں کا قتل اور اذیتیں نہ دی جائے اور ان کیساتھ بدسلوکی نہ کی جائے۔

فلسطینی قیدیوں کے امور کی نگراں کمیٹی کے سربراہ نے کہا کہ بین الاقوامی قوانین اور اقوام متحدہ کے چارٹر کے مطابق اسرائیل کے جیلوں میں قید فلسطینی قومی محاذ برائے آزادی فلسطین سے تعلق رکھتے ہیں اور ان کی جدوجہد قانونی ہےجبکہ اسرائیل کا دعویٰ ہے کہ انہیں جرم میں گرفتار کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ اسرائیلی کینسٹ نے بدھ کے روز ایک مجرمانہ قانون کی ابتدائی موافقت کی تھی جس کے تحت صہیونی حکام کو فلسطینی مجاہدین کو پھانسی دینے کی اجازت ہوگی۔

یہ بل 49 کے مقابلے میں 52 ووٹوں کیساتھ پاس ہوا، جبکہ اس بل کو قانون میں تبدیل کرنے کیلئے مزید دو مرتبہ کینسٹ میں پیش کرنا ہوگا۔

پڑھا گیا 188 دفعہ

Leave a comment

شیعہ نسل کشی رپورٹ

Shia Genocide 2016

حلب میں داعش کو شکست

حلب شام میں داعش کو شکست فاش کی لمحہ بہ لمحہ خبریں

اسلام و پاکستان دشمن مفتی نعیم

Mufti Naeem

مقالہ جات

Follow

Facebook

ڈیلی موشن

سوشل میڈیا لنکس

ہم سے رابطہ

ایمیل: This email address is being protected from spambots. You need JavaScript enabled to view it.

ویبسائٹ http://www.shiitenews.org