محمد حمدان پر بزدلانہ حملہ ’موساد‘ نے کیا :لبنان نے تصدیق کردی

کیٹیگری لبنان
Saturday, 27 January 2018


بیروت (مانیٹرنگ ڈیسک) لبنان کی وزارت داخلہ نے اسلامی تحریک مزاحمت ’حماس‘ کے رہ نما محمد حمدان پر بزدلانہ حملے میں صہیونی ریاست کے خفیہ ادارے’موساد‘ کے ملوث ہونے کی تصدیق کی ہے۔ جمعے کو ایک بیان میں وزارت داخلہ نے کہا ہے کہ دو ہفتے قبل لبنان کے شہر صیدا میں ’حماس‘ کے ایک رہ نما پر قاتلانہ حملے میں اسرائیل کے ملوث ہونے کے ٹھوس ثبوت ملے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق وزارت داخلہ کی طرف سےجاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہےکہ صیدا شہر میں حماس رہ نما کی گاڑی کو سڑک کے کنارے نصب ریموٹ کنٹرول بم سے نشانہ بنایا تھا۔ بیان میں کہا ہے کہ محمد حمدان پر قاتلانہ حملہ اسرائیل نے کرایا۔

خیال رہے کہ 14 جنوری کو جنوبی لبنان میں صیدا کےمقام پر حماس رہ نما محمدحمدان کی گاڑی ایک بم سے ٹکرا کر تباہ ہوگئی تھی۔ اس دھماکے میں حمدان زخمی ہوگئے تھے۔

محمد حمدان حماس کے صف اول کے سیاسی لیڈر ہی اور نہ ہی وہ ذرائع ابلاغ میں زیادہ مشہور ہیں۔ تاہم صیدا میں ایک فلسطینی ذریعے کا کہنا ہےکہ حمدان حماس کے سیکیورٹی ڈھانچے کے اہم عہددار ہیں اور ان کے فلسطین کے اندربھی مزاحمت کاروں سے روابطے ہیں۔

لبنانی وزیر داخلہ نھاد المشنوق کے دفتر سےجاری ہونے والے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ شعبہ اطلاعات نے حماس رہ نما پر ہونےوالے قاتلانہ حملے کی تحقیقات مکمل کرلی ہیں۔ ہمارے پاس واقعے کا پورا پس منظر، حملہ آوروں کےنام اور ان کا کردار سامنے آگیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ واقعے میں ملوث ایک مجرم کو بیرون ملک سے گرفتار کرلیا گیا ہے جس نے اعتراف کیا ہے کہ اس نے اسرائیلی انٹیلی جنس اداروں کی ہدایت پر یہ دھماکہ کیا تھا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ ملزم کی رہائش گاہ سے جدید ترین مواصلاتی آلات اور اس کے اسرائیلیوں کے درمیان رابطوں کی بھی تفصیلات حاصل کی گئی ہیں۔

قبل ازیں حماس نے بھی اس واقعے کی ذمہ داری اسرائیل کے خفیہ ادارے ’موساد‘ پر عایدکی تھی اور اسے مجرمانہ اور بزدلانہ صہیونی جرم قرار دیا تھا۔لبنانی فوج کا کہنا ہے کہ حمدان کی گاڑی کو نشانہ بنانے کے لیے لوہے کے ایک بکس میں 500 گرام دھماکہ خیز مواد استعمال کیا گیا۔

اسرائیل حماس کو فلسطین میں اپنا سب سے بڑا دشمن تصور کرتا ہے۔ سنہ 2008ء کے بعد صہیونی ریاست حماس کے خلاف تین بار جنگ کرچکی ہے۔ امریکا اور یورپی یونین بھی حماس کو دہشت گرد تنظیم قرار دیتے ہیں۔

لبنان کے شہر صیدا میں مئی 2006ء میں ایک کار بم دھماکے میں اسلامی جہاد کے رہ نما اور دو سگے بھائی محمود اور نضال مجذوب جاں بحق ہوگئےتھے۔ 2010ء میں لبنان کی ایک فوجی عدالت نے اسلامی جہاد کے رہ نماؤں کو قتل کرانے کے لیے اسرائیل کے ساتھ تعاون کرنے کے الزام میں ایک لبنانی سیکیورٹی اہلکار کو سزائے موت سنائی گئی تھی۔

پڑھا گیا 352 دفعہ

Leave a comment

شیعہ نسل کشی رپورٹ

Shia Genocide 2016

حلب میں داعش کو شکست

حلب شام میں داعش کو شکست فاش کی لمحہ بہ لمحہ خبریں

اسلام و پاکستان دشمن مفتی نعیم

Mufti Naeem

مقبوضہ کشمیر و فلسطین

مقالہ جات

امریکہ کی نئی مشکل، لبنان اسرائیل تنازعہ

امریکہ کی نئی مشکل، لبنان اسرائیل تنازعہ

سال 2018ء امریکی سامراجی بلاک اور اس کے پسندیدہ قریبی اتحادیوں کے لئے نئی مشکلات کے ساتھ شروع ہوا ہے۔ اپنی تمام تر سازشوں اور چالاکیوں کے باوجود امریک...

Follow

Facebook

ڈیلی موشن

سوشل میڈیا لنکس

ہم سے رابطہ

ایمیل: This email address is being protected from spambots. You need JavaScript enabled to view it.

ویبسائٹ http://www.shiitenews.org