اسرائیل نے بیت المقدس میں سرگرم فلسطینی سرکاری ادارے بند کردیے

کیٹیگری مقبوضہ فلسطین
Saturday, 03 February 2018


یروشلم (مانیٹرنگ ڈیسک) اسرائیلی اخبارات کے مطابق صہیونی حکومت نے مقبوضہ بیت المقدس میں شہریوں کی بہبود کے لیے کام کرنے والے فلسطینی اتھارٹی کے متعدد ذیلی ادارے بند کردیے ہیں جب کہ پہلے سے پابندی کے شکار اداروں پر پابندی برقرار رکھنے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔

اسرائیلی اخبار ’اسرائیل ٹوڈے‘ نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ حکام نے بیت المقدس میں سرگرم کئی فلسطینی فلاحی اداروں کو نوٹس جاری کیے ہیں جن میں ان کی القدس میں سرگرمیوں کو ممنوع قرار دیا گیا ہے۔

اخبار کے مطابق داخلی سلامتی کےوزیر گیلا اردان نے جمعرات کو فلسطینی تنظیموں کو ایک نوٹس جاری کیا تھا جس میں بیت المقدس میں سرگرم فلسطینی اداروں کی بندش کے احکامات جاری کیے گئےتھے۔ اس نوٹس کی نقول القدس میں ایوان صنعت وتجارت، سپریم ٹورزم کونسل، فلسطین اسٹڈی سنٹر، کلب برائے اسیران، سماجی و شماریاتی اسٹڈی آفس کو ارسال کی گئی ہیں۔

اسرائیلی وزیر کی طرف سے کہا گیا ہے کہ انہوں نے یہ نوٹس سنہ1994ء میں منظور ہونے والے اس قانون کی روشنی میں جاری کیا ہے جس میں کہا گیا تھا کہ اسرائیلی علاقوں میں فلسطینیوں کے دفاتر داخلی سلامتی کے وزیر کے حکم پر بند کیے جاسکتے ہیں۔

اسرائیلی وزیر گیلاد اردان کا کہنا ہے کہ بیت المقدس کے تمام علاقوں پر اسرائیل عمل داری کا اختیار ہے۔ فلسطینی اتھارٹی کو ان علاقوں میں مداخلت کا کوئی اختیار نہیں ہے۔

پڑھا گیا 122 دفعہ

Leave a comment

شیعہ نسل کشی رپورٹ

Shia Genocide 2016

حلب میں داعش کو شکست

حلب شام میں داعش کو شکست فاش کی لمحہ بہ لمحہ خبریں

اسلام و پاکستان دشمن مفتی نعیم

Mufti Naeem

مقبوضہ کشمیر و فلسطین

مقالہ جات

امریکہ کی نئی مشکل، لبنان اسرائیل تنازعہ

امریکہ کی نئی مشکل، لبنان اسرائیل تنازعہ

سال 2018ء امریکی سامراجی بلاک اور اس کے پسندیدہ قریبی اتحادیوں کے لئے نئی مشکلات کے ساتھ شروع ہوا ہے۔ اپنی تمام تر سازشوں اور چالاکیوں کے باوجود امریک...

Follow

Facebook

ڈیلی موشن

سوشل میڈیا لنکس

ہم سے رابطہ

ایمیل: This email address is being protected from spambots. You need JavaScript enabled to view it.

ویبسائٹ http://www.shiitenews.org