بائیکاٹ تحریک کے خلاف اسرائیل نے عالمی ماہرین سے مدد مانگ لی

کیٹیگری مقبوضہ فلسطین
Wednesday, 07 February 2018


یروشلم (مانیٹرنگ ڈیسک) اسرائیل نے عالمی سطح پر بائیکاٹ کےحوالے سے جاری تحریک ناکام بنانے کے لیے عالمی ماہرین سے مدد طلب کی ہے۔

حال ہی میں اسرائیلی ریاست تل ابیب میں ایم بین الاقوامی کانفرنس کا اہتمام کیا۔ اس کانفرنس میں عالمی سطح پر صہیونی ریاست کے بائیکاٹ کے لیے جاری تحریک کو ناکام بنانے پرغور کیا گیا۔ کانفرنس میں بین الاقوامی ماہرین کو بھی مدعو کیا گیا تھا۔

عبرانی زبان میں نشریات پیش کرنےوالے ٹی وی 7 نےاپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ عالمی کانفرنس اسرائیلی وزارت برائے پلاننگ و باہمی تعاون کی جانب سے منعقد کی گئی۔ اس کے علاوہ اس کانفرنس کو اسرائیل کے مرکزی لائرز فورم، بین الاقومی جوڈیشل انسٹیٹیوٹ اور دیگر اداروں کی معاونت حاصل تھی۔ صہیونی ریاست نے اس موقع پر عالمی ماہرین سے اپیل کی کہ وہ بائیکاٹ تحریک کو غیر موثر بنانے کے لیے اسرائیل کی مدد کریں۔

صہیونی حکام نے اپنے حامی عالمی اداروں سے مطالبہ کیا کہ وہ اسرائیل کا بائیکاٹ غیر موثر بنانے کے لیے اپنے اپنے ملکوں میں آئین سازی کرائیں۔

عبرانی اخبار ’یسرائیل ھیوم‘ نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ فرانس میں یہودی تارکین وطن کی کونسل کے رکن اور قانون دان باسکال مارکوفیٹچ نے کہا ہے کہ ’BDS‘ کے خلاف جاری اسرائیلی مہم کامیابی سے ہم کنار ہوگی۔

پڑھا گیا 293 دفعہ

Leave a comment

شیعہ نسل کشی رپورٹ

Shia Genocide 2016

حلب میں داعش کو شکست

حلب شام میں داعش کو شکست فاش کی لمحہ بہ لمحہ خبریں

اسلام و پاکستان دشمن مفتی نعیم

Mufti Naeem

مقبوضہ کشمیر و فلسطین

فلسطینی عوام کا واپسی مارچ جاری رکھنے کا اعلان

فلسطینی عوام کا واپسی مارچ جاری رکھنے کا اعلان

فلسطین انفارمیشن سینٹر کے مطابق وزارت صحت کی جاری کردہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اسرائیلی فوج کی وحشیانہ جارحیت میں شہید ہونے والوں میں تیرہ بچے بھی ش...

مقالہ جات

صدی کی سب سے بڑی ڈیل کیا ہے؟

صدی کی سب سے بڑی ڈیل کیا ہے؟

صدی کی سب سے بڑی ڈیل در حقیقت مسئلہ فلسطین کے حل کے لئے ایک نیا نقطہ نظرہے جسے امریکی صدر ٹرمپ نے پیش کیا ہے اور اس نقطہ نظر کو امریکی اتحادی عرب ممال...

Follow

Facebook

ڈیلی موشن

سوشل میڈیا لنکس

ہم سے رابطہ

ایمیل: This email address is being protected from spambots. You need JavaScript enabled to view it.

ویبسائٹ http://www.shiitenews.org