ڈی آئی خان میں دہشت گرد ساز فیکٹریوں کے خلاف آپریشن کیا جائے،آئی ایس او پاکستان

کیٹیگری پاکستان
Wednesday, 14 February 2018


شیعیت نیوز: ڈیرہ اسماعیل خان: امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے مرکزی صدر انصر مہدی نے ڈی آئی خان کے 2روزہ دورہ کے دوران ڈی آئی خان میں اہم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ڈی آئی خان میں ایک با رپھر شیعہ ٹارگٹ کلنگ کا سلسلہ جاری ہے گزشتہ ہفتے تین افراد کو شیعہ شناخت قتل کیا گیا۔

قتل و غارت اور بربریت کا یہ سلسلہ نیا نہیں ہے ڈی آئی خان میں پہلے سالوں کی نسبت گزشتہ سالوں میں ٹارگٹ کلنگ کے واقعات میں اضافہ ہوا جس کی ذمہ دار خیبر پختوانخواء حکومت ہے جو پولیس کو مثالی پولیس قرار دیتی ہے کیا یہ پولیس کی ناکامی نہیں ہے کہ سی سی ٹی فوٹیج ہونے کے باجود بھی قاتلوں کو گرفتار کرنے میں ناکام ہے

مرکزی صدر نے کہا کہ ایک طرف تو ہمیں قتل کیا جارہا ہے دوسری جانب ڈی آئی خان میں شیعہ نوجوانوں کو جبری طور پر اغواء کیا گیا۔

پاکستان میں تمام ادارے اور قانون موجود ہیں ۔اگر وہ مجرم ہیں تو ان کو عدالت میں پیش کیا جائے اور ان کو قانونکے مطابق سزا دی جائے ۔جبری طور پر گمشدگیاں ورثاء کے لئے دوہری اذیت کا سبب بنی ہوئی ہیں ۔

انصر مہدی نے کہا ڈیرہ اسماعیل خان میں شیعہ ٹارگٹ کلنگ کے پے در پے واقعات نے صوبائی حکومت کے گڈ گورننس اور مثالی پولیس کی تشکیل کے دعوئوں کی قلعی کھول دی ہے۔

گذشتہ چند ہفتوں میں متعدد جوان بے دردی سے قتل کر دیئے گئے ہیں، سی سی ٹی وی فوٹیجز میں قاتلوں کی واضح شناخت کے باوجود ایک بھی قاتل اب تک قانون کی گرفت میں نہ آنا باعث تشویش ہے۔

حکومتی بے حسی سے ایسا محسوس ہوتا ہے، جیسے ڈیرہ اسماعیل میں مارے جانے والے نہ ہی اس ملک کے شہری ہیں اور نہ ہی انسان، چیف جسٹس آف پاکستان ڈیرہ اسماعیل خان میں جاری شیعہ نسل کشی کا فوری سوموٹو نوٹس لیں۔

آئی ایس او پاکستان کے مرکزی صدرانصر مہدی نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ وزیراعلی خیبر پختونخوا کے پاس اتنا وقت بھی نہیں کہ وہ عوام کو تحفظ فراہم کرنے کے اقدامات کریں اور شہدا کے گھروں میں جا کر اہل خانہ کی داد رسی کرسکیں۔ ڈی آئی خان کی ہر شاہراہ پر پولیس کے ناکے اور مسلسل گشت کے باوجود اس طرح کے واقعات کا رونما ہونا ہمارے لئے شکوک و شبہات کا باعث ہے۔ حکومت ہمارے خون کو سستا سمجھ رہی ہے۔

مرکزی صدر نے مطالبہ کیا کہ حکومت ٹارگٹ کلنگ کے واقعات پر قابو پانے کے لئے موثر حکمت عملی طے کرے۔ ڈی آئی خان میں دہشت گردی کے بڑھتے ہوئے واقعات انتہا پسندوں اور سہولت کاروں کے خلاف بھرپور آپریشن کا تقاضا کر رہے ہیں۔

دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ کے موثر نتائج اس وقت تک حاصل نہیں ہوسکتے، جب تک کالعدم مذہبی جماعتوں سے دوستانہ تعلقات کا کھلم کھلا دعوی کرنے والے عناصر کو ملک دشمن قرار دے کر ان کے خلاف بھرپور کارروائی نہیں کی جاتی۔

دہشتگردی کے تدارک کے لئے ضروری ہے کہ ان دہشت گرد ساز فیکٹریوں کے خلاف آپریشن کیا جائے۔

پڑھا گیا 65 دفعہ

Leave a comment

شیعہ نسل کشی رپورٹ

Shia Genocide 2016

حلب میں داعش کو شکست

حلب شام میں داعش کو شکست فاش کی لمحہ بہ لمحہ خبریں

اسلام و پاکستان دشمن مفتی نعیم

Mufti Naeem

مقبوضہ کشمیر و فلسطین

مقالہ جات

امریکہ کی نئی مشکل، لبنان اسرائیل تنازعہ

امریکہ کی نئی مشکل، لبنان اسرائیل تنازعہ

سال 2018ء امریکی سامراجی بلاک اور اس کے پسندیدہ قریبی اتحادیوں کے لئے نئی مشکلات کے ساتھ شروع ہوا ہے۔ اپنی تمام تر سازشوں اور چالاکیوں کے باوجود امریک...

Follow

Facebook

ڈیلی موشن

سوشل میڈیا لنکس

ہم سے رابطہ

ایمیل: This email address is being protected from spambots. You need JavaScript enabled to view it.

ویبسائٹ http://www.shiitenews.org