یورپی ممالک سعودی اتحاد کو اسحلہ بیچنا بند کریں

کیٹیگری یمن
Thursday, 05 July 2018


یورپی یونین کے وفد کی سربراہ ماریہ ایٹونیا کالفو سے بات چیت کرتے ہوئے یمن کی اعلی سیاسی کونسل کے سربراہ نے کہا کہ اب وہ وقت آن پہنچا ہے کہ یورپی یونین ان ملکوں سے صاف صاف کہہ دے کہ بہت ہوچکا اب جنگ بند کرو۔
یمن کی اعلی سیاسی کونسل کے سربراہ امید ظاہر کی کہ یورپی یونین بحران کے حل اور یمن پر جارحیت کے ختم کرانے میں اہم کردار ادا کرے گی تاکہ جارح کے حوالے سے عالمی پالیسیوں میں توازن پیدا ہو سکے۔
برطانیہ، فرانس، جرمنی، اٹلی، کروشیا، سوئیڈن، بیلجیئم، سلواکیہ، جمہوریہ چیک اور اسپین، ایسے ممالک ہیں جنہوں نے سعودی عرب کو سب سے زیادہ ہتھیار فروخت کئے ہیں۔
اس سے پہلے یمن کی قومی حکومت کے وزیر مملکت عبدالعزیز احمد البکیر نے اپنے ایک بیان میں الحدیدہ حملے کو امریکی اسرائیلی سازش قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس سازش پر متحدہ عرب امارات اور سعودی عرب جیسے امریکی صیہونی پٹھو عمل کر رہے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ جنگ روکنے کے اعلان کے باجود جارح اتحاد کے حملے بدستور جاری ہیں جس سے لگتا ہے کہ جنگ بندی کا اعلان دشمن نے اپنی صفوں کو دوبارہ منظم کرنے کی غرض سے کیا تھا۔
یمن کی قومی حکومت کے وزیر مملکت نے مزید کہا کہ امریکہ پچھلے تین عشروں سے آبنائے باب المندب اور بحیرہ احمر میں جہاز رانی کے راستوں کو اپنے کنٹرول میں لینے کی فکر میں ہے اور اب یہ حرص کھل کر سامنے آگئی ہے۔
انہوں نے کہا کہ عالمی رائے عامہ کو گمراہ کرنے کے تمام تر حربوں کے باوجود ساری دنیا جان چکی ہے کہ جنگ یمن کے پیچھے امریکہ کا ہاتھ ہے جس کا مقصد عالمی تجارت پر قبضہ جمانے کی دیرینہ آرزو کو پورا کرنا ہے۔
قابل ذکر ہے کہ متحدہ عرب امارات اور سعودی عرب نے دو ماہ قبل یمنی عوام کو عالمی امداد پہنچانے والے واحد راستے یمن کی الحدیدہ بندرگاہ پر قبضہ کرنے کے لئے حملوں کا آغاز کیا تھا اور اس جارحیت میں انہیں امریکہ، برطانیہ اور فرانس کی بھرپور حمایت حاصل رہی ہے، تاہم یمنی عوام کی مزاحمت کے نتیجے میں ان کا یہ مقصد پورا نہیں ہو سکا ہے۔
سعودی عرب اور اس کے اتحادیون نے مارچ دو ہزار پندرہ سے مشرق وسطی کے غریب اسلامی ملک یمن کو جارحیت کا نشانہ بنانے کے علاوہ اس کا زمینی، فضائی اور سمندری محاصرہ بھی کر رکھا ہے۔
سعودی جارحیت کے نتیجے میں اب تک چودہ ہزار سے زائد یمنی شہری شہید اور دسیوں ہزار زخمی ہوئے ہیں جبکہ کئی لاکھ افراد کو اپنا گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہونا پڑا ہے۔

پڑھا گیا 82 دفعہ

Leave a comment

شیعہ نسل کشی رپورٹ

Shia Genocide 2016

حلب میں داعش کو شکست

حلب شام میں داعش کو شکست فاش کی لمحہ بہ لمحہ خبریں

اسلام و پاکستان دشمن مفتی نعیم

Mufti Naeem

مقبوضہ کشمیر و فلسطین

ایندھن کی قلت، غزہ کا سب سے بڑا اسپتال بند ہونے کا خدشہ

ایندھن کی قلت، غزہ کا سب سے بڑا اسپتال بند ہونے کا خدشہ

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک)فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی میں ایک بڑے اسپتال ’الشفاء میڈیکل کپملیکس‘ نے ایندھن کی عدم دستیابی اور ادویات کی قلت کے ب...

مقالہ جات

طاغوتی قوتوں کے خلاف جہاد، عاشورا کا سرمدی پیغام

طاغوتی قوتوں کے خلاف جہاد، عاشورا کا سرمدی پیغام

اگرچہ واقعہ عاشورا 61 ہجری میں پیش آیا لیکن چونکہ اس کا مقصد ایسی حکومت کے خلاف جہاد تھا جس کی بنیاد دھوکے، جھوٹ اور لالچ کی سیاست پر استوار تھی اور و...

Follow

Facebook

ڈیلی موشن

سوشل میڈیا لنکس

ہم سے رابطہ

ایمیل: This email address is being protected from spambots. You need JavaScript enabled to view it.

ویبسائٹ http://www.shiitenews.org