تازہ ترین

اسرائیل کی نابودی تک واپسی مارچ جاری رہے گا

کیٹیگری مقبوضہ فلسطین
Saturday, 07 July 2018


فلسطین کی وزارت صحت کے ترجمان اشرف قدرہ نے بتایا ہے کہ ایک بائیس سالہ نوجوان جمعے کو ہونے والے پرامن واپسی مارچ پر اسرائیلی فوجیوں کی فا‏ئرنگ کا نشانہ بن کر شہید ہو گیا۔ مذکورہ فلسطینی نوجوان کی شہادت کے بعد تیس مارچ سے شروع ہونے والے گرینڈ واپسی مارچ پر اسرائیلی فوجیوں کی فائرنگ میں شہید ہونے والے فلسطینیوں کی تعداد ایک سو چالیس ہو گئی ہے۔
گرینڈ واپسی مارچ کی منتظمہ کمیٹی نے پندرہویں واپسی مارچ کو سینچری ڈیل کی مکمل ناکامی اور غزہ کے محاصرے کے خاتمے کے نام سے منانے کا اعلان کیا تھا۔
دوسری جانب فلسطین کی اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کے سینیئر رہنما محمود الزہار نے کہا ہے کہ سینچری ڈیل کا لفظ فلسطینیوں کی لغت میں شامل نہیں ہے۔
غزہ میں واپسی مارچ کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے محمود الزہار کا کہنا تھا کہ اسرائیل کے ساتھ امن اور بقائے باہمی کی تمام کوششیں بے سود واقع ہوں گی۔
انہوں نے کہا کہ فلسطین کے عوام پوری طرح ہوشیار ہیں اور کسی بھی نام سے کسی کو بھی اپنی سرزمین کا سودا کرنے کی اجازت نہیں دیں گے۔
حماس کے رہنما نے کہا کہ عربوں کی غفلت پر خوش ہونے والوں کی آنکھیں مسجد الاقصی کے دروازوں پر فلسطینیوں کی صدائے اللہ اکبر پر ہی کھلیں گی۔
انہوں نے اسرائیل کو سرطانی پھوڑا قرار دیا اور اس کی نابودی کی ضرورت پر تاکید کرتے ہوئے کہا کہ فلسطینیوں کی تحریک مزاحمت کے نتیجے میں صیہونیوں کو علاقے سے جانا ہی پڑے گا۔
قابل ذکر ہے کہ بعض عرب ممالک اور امریکہ کے گٹھ جوڑ کے نتیجے میں تیار کیے جانے والے ناپاک سازشی منصوبے سینچری ڈیل کے تحت بیت المقدس اسرائیل کے حوالے کر دیا جائے گا جبکہ آوارہ وطن فلسطینی واپسی کے حق سے محروم ہو جائیں گے۔

پڑھا گیا 166 دفعہ

Leave a comment

شیعہ نسل کشی رپورٹ

Shia Genocide 2016

حلب میں داعش کو شکست

حلب شام میں داعش کو شکست فاش کی لمحہ بہ لمحہ خبریں

اسلام و پاکستان دشمن مفتی نعیم

Mufti Naeem

مقبوضہ کشمیر و فلسطین

ایندھن کی قلت، غزہ کا سب سے بڑا اسپتال بند ہونے کا خدشہ

ایندھن کی قلت، غزہ کا سب سے بڑا اسپتال بند ہونے کا خدشہ

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک)فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی میں ایک بڑے اسپتال ’الشفاء میڈیکل کپملیکس‘ نے ایندھن کی عدم دستیابی اور ادویات کی قلت کے ب...

مقالہ جات

طاغوتی قوتوں کے خلاف جہاد، عاشورا کا سرمدی پیغام

طاغوتی قوتوں کے خلاف جہاد، عاشورا کا سرمدی پیغام

اگرچہ واقعہ عاشورا 61 ہجری میں پیش آیا لیکن چونکہ اس کا مقصد ایسی حکومت کے خلاف جہاد تھا جس کی بنیاد دھوکے، جھوٹ اور لالچ کی سیاست پر استوار تھی اور و...

Follow

Facebook

ڈیلی موشن

سوشل میڈیا لنکس

ہم سے رابطہ

ایمیل: This email address is being protected from spambots. You need JavaScript enabled to view it.

ویبسائٹ http://www.shiitenews.org