مفتی نعیم اپنے فتووں کی وجہ سےسال ۲۰۱۵ کی شرانگیز شخصیت قرار،رپورٹ

کیٹیگری پاکستان
Thursday, 31 December 2015 00:00

آج سال دوہزار پندرہ 2015 کا آج آخری دن ہے، سال بھر کے اچھے اور برے کاموں کی فہرست مرتب کی جارہی ہے، جس نے کوئی اچھا کام کیا اسے پذیرائی دی جائے گی اور جس نے کوئی برا کا م کیا وہ قابل مذمت قرار پائے گا، اِسی مرتب کی گئی ترتیب میں مفتی نعیم بھی اپنے متنازعہ فتویٰ کی وجہ سے شامل گفتگو ہیں۔

مفتی نعیم کی جامعہ بنوریہ کی سائیٹ سال دوہزار پندرہ میں میڈیا سمیت مختلف حلقو ں میں زیر بحث رہی ہے، جہاں پر ایسے فتووں کی بھرما رہے جنکی بنیاد پر شدت پسندی اور تکفیریت پروان چڑھ رہی رہے، مفتی نعیم کے جس فتوے نے سال دوہزار پندرہ میں کافی فتنہ پھیلایا وہ انکا قائداعظم محمد علی جناح کو کافر قرار دینے کا فتویٰ اور مولائے کائنات امیرالمومینن علی ابن ابو طالب علیہ سلام کی جائے ولادت خانہ کعبہ کی نفی کا فتویٰ تھا، اسکے ساتھ ہی اسمائیلی برادری پر ہونے والے حملے کے بعد اسماعلیوں کو کافر قرار دینے والے فتویٰ کے منظر عام پر آنے کے بعدبھی مفتی نعیم کافی متنازعہ شخصیت بن گئے تھے،ا س کے علاوہ وزیر اطلاعات پرویز رشید کو مرتد بھی مفتی نعیم نے سن دوہزار پندرہ میں قرار دیا۔

لنکس پر کلک کریں

اسماعیلی شیعہ کافر کہہ کر ایک بار پھر 43 افراد شہید،کفر کے فتویٰ دینے والے مفتی نعیم آزاد

قائداعظم سمیت پاکستان کے تمام شیعہ کافر ہیں، مفتی نعیم اینڈ کمپنی جامعہ بنوریہ

حضرت علی کی ولادت خانہ کعبہ میں نہیں ہوئی، دشمن علی مفتی نعیم کا فتویٰ

پرویز رشید کو مرتد کہنا مفتی نعیم کو بھاری پڑ گیا، وفاقی وزیر کا قومی اسمبلی میں منہ توڑ جواب

بالاآخر مفتی نعیم نے ایک ٹی وی پروگرام میں وعدہ کیا تھا کہ وہ ایسے فتووں کوجامعہ بنوریہ کی ویب سائٹ سے ڈیلیٹ کردیں گے تاہم ابھی تک انہوں نے ان شر انگیز فتووں کو ڈیلیٹ نہیں کیا ،جبکہ ابھی بھی انکی ویب سائٹ پر یہ فتوے موجود ہیں۔

مفتی نعیم کے شرانگیز ی پر مبنی تحریریں اور فتویٰ کی تفصیل جاننے کے لئے نیچے دیئے گئے لنک پر کلک کریں۔

مفتی نعیم کے شر انگیز فتوے جاننے کے لئے مفتی نعیم کی ناک پر کلک کریں

Mufti-Naeem-in-Favor-of-Junaid-Jamshed-On-Ammi-Aisha-Issue.jpg

مفتی نعیم کی بھارتی رگ جاگ اُٹھی، اعلانیہ بھارت سے محبت کا اظہار شہداء کے خون سے غداری ہے

کیٹیگری پاکستان
Monday, 26 October 2015 00:00

بھارتی انتہاپسند تنظیم شیوسینا کی نفرت انگیز کارروائیوں کے باوجود بھارتیوں کی بڑی تعداد پاکستان اور پاکستانیوں سے محبت کرتی ہے جس کا اظہار سوشل میڈیا پر کیا گیا۔ اسی طرح پاکستانیوں کی جانب سے بھی ایسے ہی پیغام سامنے آئے، لیکن اب جامعہ بنوریہ کراچی کے سربراہ مفتی محمد نعیم بھی اس مہم میں حصہ لیتے ہوئے اپنے پیغام کیساتھ سامنے آئے ہیں اور انہوں نے اس مہم کو انتہائی قابل تحسین اقدام قرا ر دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق مفتی نعیم نے سوشل میڈیا پر اپنی تصویر جاری کی ہے، جس میں وہ ایک کاغذ پکڑے ہیں، جس پر درج ہے کہ "وہ جامعہ بنوریہ کے سربراہ ہیں، وہ ایک پاکستانی ہیں اور بھارت سے نفرت نہیں کرتے، یہ خیالات رکھنے والے وہ اکیلے نہیں بلکہ کئی دیگر علماء کرام بھی ان جیسے خیالات رکھتے ہیں"۔

مفتی محمد نعیم نے سوشل میڈیا پر اپنی ایک ویڈیو بھی جاری کی ہے جس میں انہوں نے کہا ہے کہ آپ کو معلوم ہے کہ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان گزشتہ 70 سال سے ایک ایسی فضا پید کر دی گئی ہے جس سے معلوم ہوتا ہے کہ دونوں ممالک کی آپس میں دشمنی ہے، ہندوستان میں چند انتہا پسند لوگ ہیں جنہوں نے پورے ملک کو یرغما ل بنایا ہوا ہے جبکہ ہندوستانی عوام کی اکثریت چاہتی ہے کہ وہ پاکستان آئیں کیونکہ ان کے عزیز و اقارب یہاں رہتے ہیں ان سے ملیں، اسی طرح پاکستانی بھی چاہتے ہیں کہ وہ بھارت جا سکیں لیکن دونوں ایک دوسرے کے ملک نہیں جا سکتے، اس کی بڑی وجہ ہندوستان کے چند انتہا پسند ہیں لیکن خوشی کی بات یہ ہے کہ ہندوستانی نوجوانوں نے سوشل میڈیا پر پاکستان سے دوستی کی جو مہم شروع کی ہے، وہ نہایت قابل تحسین ہے، اسی طرح پاکستان کی جانب سے بھی نوجوانوں نے ایسے ہی خیالات کا اظہار کیا ہے۔

دوسری جانب مبصرین اور محب وطن حلقوں نے مفتی نعیم کے اس اقدام کو آڑے ہاتھوں لیا ہے۔ ناقدین کا کہنا ہے کہ مفتی نعیم کا بنیادی گھر دیوبند چونکہ انڈیا میں ہے اور ان کے آباؤ اجداد بھی انڈین تھے اور اب بھی ان کے رشتہ دار وہاں ہیں تو یہ اپنے مرکز دیوبند اور عزیزو اقارب کے لئے بے چین ہیں اور اسی وجہ سے بھارت کیساتھ معانقہ کیلئے بے تاب ہوئے جا رہے ہیں۔ مبصرین کے مطابق ہندو کبھی بھی مسلمان کا دوست نہیں ہو سکتا، ہندو اگر مسلمانوں کے دوست ہوتے تو پاکستان بنانے کی ضرورت ہی پیش نہ آتی، پاکستان بنایا ہی اسی لئے گیا تھا کہ ہندوؤں نے مسلمانوں کے حقوق سلب کر رکھے تھے، مذہبی آزادی نہیں تھی اور آج انڈیا میں گائے ذبح کرنے والوں کیساتھ جو سلوک ہو رہا ہے، وہ سلوک عید قربان پر مفتی نعیم صاحب کے ساتھ بھی ہوتا۔ مبصرین نے کہا ہے کہ جو نوجوان سوشل میڈیا پر اس مہم کو زور و شور سے چلا رہے ہیں وہ صرف عیاشی کے رسیا ہیں اور بھارتی فلموں اور ڈراموں کی دنیا سے متاثر ہو کر انڈیا کیساتھ "فری بارڈر" کے خواہش مند ہیں تاکہ وہاں جا کر اپنی پسندیدہ ہیروئینز کیساتھ ملاقات کر سکیں۔ ناقدین کا کہنا ہے کہ شراب و شباب کے رسیا دو قومی نظریہ کو پامال نہیں کر سکیں گے، پاکستان سے سچی محبت کرنے والے ان سے لاکھوں گنا زائد ہیں۔

ناقدین کا مزید بھی کہنا تھا کہ مفتی نعیم صاحب نے اتحاد بین المسلمین کی خاطر ایسی مہم کبھی کیوں نہیں چلائی ؟جسکی پاکستان میں اشد ضرورت ہے، جس ملک میں مسلمان مسلمان کو قتل کررہا ہے، اللہ اکبر کا نعرہ لگا کر مسجد میں پھٹ رہا ہے وہاں پر تو علماء کی جانب سے ایسی مہم چلانے کی شدت سے ضرورت ہے شیعہ سنی بھائی بھائی ہیں، تکفیریت خارج اسلام ہے و دیگر نعرہ پر مبنی تصاویر کے ہینڈ بل اُٹھائے مفتی صاحب اپنی تصویر پوسٹ کرتے تو عین اسلام ہوتا ، لیکن اس عمل سے چونکہ انکی فرقہ پرستی کی دوکانین بند ہونے کا خطرہ ہے ، انہیں عرب و بھارت سے پیسے ہی پاکستان میں شدت پسندی کو پھیلانے کے لئے دیئے جاتے ہیں، اور بھارت سے محبت کا اظہار انکے را پرست ہونے کی دلیل ہے۔

کیا مفتی نعیم کا اس طرح اعلانیہ پاک فوج سمیت ملکی دفاع کی خاطر جان دینے والے شہداء سے غداری نہیں؟

خلفاء راشدین کے ایام منانا حرام ہے، مفتی نعیم کا فتویٰ

کیٹیگری پاکستان
Wednesday, 14 October 2015 00:00

مشہور و معروف دیوبند مکتب فکر کے عالم دین علامہ مفتی نعیم کے مدرسہ جامعہ بنوریہ کے آفیشل ویب سائٹ کے مطابق مفتی نعیم اینڈ کمپنی نے خلفاء راشدین سمیت دیگر بزرگان دین کے ایام شہادت و ولادت منانے کو حرام قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اسکی کوئی دین میں اجازت نہیں اور نا ہی یہ باعث ثواب ہے۔

دوسری جانب چونکہ منافقت انکی رگ رگ میں بسی ہوئی ہے لہذا فتویٰ کے دوسر ے حصے میں یہ صاحب کہتے ہیں کہ باطل کے مقابلے میں سیاسی حربہ (فرقہ واریت ) کے لئے منانے میں کوئی حرج نہیں۔

دھیاں رہے کہ آج اسی منافقانہ فتویٰ کی بنیاد پر مفتی نعیم کے حمایت یافتہ ملک دشمن فرقہ پرست  دہشتگرد ٹولہ مسلمانوں کے اہم ایام میں جان بوجھ کر خلفاء ثلاثہ کے شہادت کے ایام اور یوم کے نام پر فتنہ و فساد پیدا کرتا ہے، انکی یہ حرکت مفتی نعیم کے فتویٰ کے عین مطابق ہے، چونکہ یہ دیگر مسلمانوں (شیعہ و سنی) حضرات کو باطل سمھجتے ہیں لہذا انکے مقابلے میں سیاسی حربہ کے طور پر زبردستی ایام خلفاء کے نام پر کبھی محرم ،غدیر اور دیگر موقع پر فرقہ واریت کو ہوا دینے کے لئے ملک بھر میں جلسہ جلو س منعقد کرتے ہیں۔ جس میں خلفاء کی سیرت پر گفتگو کم اور دیگر فرقہ کا ایکسرے زیادہ ہوتا ہے۔

جبکہ حقیقت اسکے برعکس ہے، حضرت عمر کی شہادت 26 یا 27 ذی الحجہ ہے ، لیکن چونکہ شیعہ و سنی محرم میں امام حسین کی یاد پہلی تا دس محرم مناتے ہیں ، ان تکفیری و فرقہ پرست ٹولے نے زبردستی یکم محرم کو یوم عمرفاروق کا سوشہ چھوڑ ڈالا، اسی طرح جب مسلمان 18 ذی الحجہ کو یوم غدیر مناتے ہیں تو یہ حضرت عثمان کی شہادت کا شور مچانا شروع کردیتے ہیں ، حالانکہ حضرت عثمان کی شہادت 15 یا 17 ذی الحجہ ہے، اسی طرح دیگر ایام میں بھی ایسا ہی ہوتا ہے۔

مفتی نعیم کی آفیشل ویب کا امیج ذیل میں موجود ہے، خود ملاحظہ فرمائیں۔

NaeemFatwa-compressor.jpg
  

ہیٹ اسٹروک کے لئے لگائے گئے کیمپ کے خلاف بھی مفتی نعیم دیوبندی نے فتویٰ دھر دیا

کیٹیگری پاکستان
Monday, 29 June 2015 00:00

جامعہ بنوریہ کے مہتتم دیوبند مفتی محمدنعیم نے کہاکہ کھلے عام روزہ خوری رمضان المبارک کے تقدس کی پامالی ہے اور اللہ کے عذاب کو دعوت ہے ، جس طرح رمضان میں روزہ فرض ہے اسی طرح رمضان کے تقدس کا خیال رکھنا بھی ضروری ہے،ہیٹ اسٹروک سینٹرز میں مبینہ طور پرسرعام روزہ کھانا رمضان کے تقدس کی پامالی ہے، حکومت رمضان المبارک ایکٹ پر عمل درآمد کرائے ۔ اے سی کے کمرے میں بیٹھ کر دیوبندی تکفیری مفتی نعیم کاگرمی کی شدت سے بچنے کے لئے لگائے گئے ہیٹ اسٹروک سے بچاو کے کیمپ کے خلاف فتویٰ کو عوام نے مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ مولانا کون ہوتے ہیں یہ طے کرے والے کے کیمپس میں صحت مند افراد روزہ خوری کررہے ہیں، جبکہ جس گرمی کا شہر کو سامنا ہے اس میں صحت مند افراد بھی ہیٹ اسٹروک کا شکار بن رہے ہیں، محض مارکیٹ میں ان رہنے کے لئے مفتی نعیم ائیر کنڈیشن میں بیٹھ کر عوام کی پریشانی کونظراندار کرتے ہوئے مفتی کا یہ فتویٰ نا تو اسلام دوست بلکہ عوام دشمن ہے۔

سپاہ صحابہ کو بچانے کے لیے مفتی نعیم نے سنی تحریک پر پابندی لگانے کا مطالبہ کردیا

کیٹیگری پاکستان
Monday, 22 June 2015 00:00

جامعہ بنوریہ عالمیہ کے شیخ الحدیث اور دیوبندی دہشتگردوں کے سہولت کار مفتی محمد نعیم نے گذشتہ روز رینجرز کی جانب سے سنی تحریک کے مرکز پر چهاپے کے ردعمل میں کہا کہ ہم کراچی میں قیام امن کے لئے رینجرز کی خدمات کو سراہتے ہیں اور رینجرز کی کارروائیوں کی بهرپور حمایت بهی کرتے ہیں،اور حکومتی اہلکاروں سے اپیل کرتے ہیں کہ اسی دہشت تنظیم کو کالعدم قرار دے کر ان کے خلاف بهرپور کریک ڈائون کیا جائے.مفتی نعیم کا کہنا تها کہ رمضان المبارک کے موقع بهی یہ دہشت گرد گروہ تعصب اور فرقہ واریت پهیلانے میں اہم کردار ادا کررہا ہے،لہذا رینجرز افسران سے اپیل ہے کہ ان ٹارگٹ کلرز کے گروہ کے خلاف مکمل کریک ٹائون کر کے ان کا صفایا کیا جائے

بلکل مفتی صاحب دہشتگردی کا صفایہ اس ملک سے ضروری ہے لیکن ذر اس قسم کا رد عمل مدارس سے گرفتار ہونے والے دہشتگردوں کے خلاف بھی دیکھا دیا کریں اور ان مدارس پر پابندی لگانے کا مطالبہ بھی کردیا کریں، چونکہ سنی تحریک آپ کے مسلک سے تعلق نہیں رکھتی تو آپ رینجرز کے اقدام کو سہرانے لگے لیکن جب یہی رینجرز مدارس سے آپ کے ہم مسلک دہشتگردوں کو پکڑتی ہے تو آپکو کیوں چپ سادھ جاتی ہے۔

جنت کی حوروں کا مذہب سنی (دیوبندی) ہے قائد مفتی نعیم ہیں

کیٹیگری پاکستان
Tuesday, 16 June 2015 00:00

جامعہ بنوریہ کے فتوؤں میں سے ایک اور بے تکا فتویٰ منظر عام پر آیا ہے جس میں موصوف مفتی نعیم کی ٹیم نے حوروں کے مذہب کو اہلسنت والجماعت قرار دیتے ہوئے انہیں سنی( دیوبندی) قرار دیا ہے۔

چونکہ ان بنوریہ والوں کی نظر میں اہل سنت صرف دیوبندی ہیں،لہذا جنت کی حؤریں بھی دیوبندی ہونگیں، اسی فلسفہ کو اگر مدنظر رکھا جائے تو حؤروں کے قائد جنت میں مفتی نعیم ہونگے۔

اب دیگر مسلمان الرٹ ہوجائیں کیونکہ انکو جنت میں حورین نہیں ملنے والی کیونکہ اللہ میان نے مفتی نعیم اینڈ کپمنی کو بتادیا ہے کہ جنت میں مذہب کون سا رائج ہوگا اور حورین بھی کسی مکتب سے ہونگی لہذا دیگر فرقوں کے مسلمان اب حوروں کی لالچ چھوڑ دین۔

اے اللہ اس وہابی دیوبندی فتنہ سے بچا!!

 

34283428b

مجاہدین (طالبان / داعش ) کی مخالفت کرنے والا دائر اسلام سے خارج (کافر)ہے،مفتی نعیم

کیٹیگری پاکستان
Monday, 01 June 2015 00:00

مفتی نعیم کی فتویٰ ساز کمپنی کا ایک چھپا ہوا فتویٰ شیعت نیوز کی ریسرچ ٹیم کو موصول ہے جس میں ان صاحب نے اُن افراد کو بھی دائر ہ اسلام سے خارج(کافر) قرار دیدیا ہے جو دہشتگردی کرنے والے (مجاہدین) کی مذمت کرتے ہیں یا مخالفت کرتے ہیں ،بقول انکے کہ جو مجاہد ین کی مخالفت کرے گا وہ اسلام سے خارج ہے۔تفصیل جاننے کے لئے نیچے دیئے گئے فتویٰ کو خود پڑھ لیں۔

fatwa777

تکفیری دہشتگردی کیخلاف فیصلہ کن اقدامات کررہےہیں، آئندہ نسلوںکومحفوظ پاکستان دینگے،پرویزرشید

کیٹیگری پاکستان
Monday, 25 May 2015 00:00

وفاقی وزیر اطلاعات سینیٹر پرویز رشید نے کہا ہے کہ ہمیں اپنے مذہب ،قرآن کی تعلیم اورحضورﷺ کے بتائے ہوئے راستے پر چلنا ہے ، یہ راستہ کسی کی زندگی لینے نہیں بلکہ زندگیاں دینے والا ہے،حکومت ،پاک فوج اور سکیورٹی ادارے دہشت گردوں کے خلاف فیصلہ کن اقدامات کررہے ہیں‘آئندہ نسلوں کو محفوظ پاکستان دیں گے‘اللہ تعالیٰ رحمتیں نازل کرنے میں تقسیم نہیں کرتاتوہم کیوں تقسیم اورفرقوں میں بٹے ہوئے ہیں‘ اسلام کا پیغام پہنچانے کے لیے وہ راستہ اختیار کیا جائے جو قرآن و سنت کے عین مطابق ہے‘عام انتخابات مقررہ وقت پر ہی ہوں گے ‘ 2015میںپی ٹی آئی کے پارٹی الیکشن ہوسکتے ہیں ۔وہ اتوار کو الخلیل قرآن کمپلیکس کالج روڈ راولپنڈی میں تقسیم اسناد و دستار بندی کی تقریب سے خطاب کر رہے تھے ۔ پرویز رشید نے کہا کہ مدارس سے میرا40سال پرانا تعلق ہے ‘اسلام لوگوں کی زندگی بچانے کا درس دیتا ہے‘دہشت گردی سراسرگھاٹے اورنقصان کا راستہ ہے‘ ہم صرف اپنے نہیں بلکہ دہشت گردوں کے بچوں کو بھی محفوظ پاکستان دینا چاہتے ہیں‘سری لنکن کرکٹ ٹیم پر دہشت گردوں نے لاہور میں حملہ کیالیکن سری لنکن ڈاکٹرز ڈینگی کا شکار پاکستانیوں کی زندگیاں بچانے کے لیے پاکستان آئے‘سری لنکن ڈاکٹروں نے جو ہمارے ساتھ کیا یہ وہی تعلیم ہے حضورؐ نے جس کی تلقین کی تھی‘علماء دوریاں اور نفاق پیدا کرنے والی باتوں سے احتراز برتتے ہیں۔

Page 1 of 4

شیعہ نسل کشی رپورٹ

Shia Genocide 2016

حلب میں داعش کو شکست

حلب شام میں داعش کو شکست فاش کی لمحہ بہ لمحہ خبریں

اسلام و پاکستان دشمن مفتی نعیم

Mufti Naeem

مقبوضہ کشمیر و فلسطین

مقالہ جات

حزب اللہ کیوں کھٹکتی ہے! ایاز میر

حزب اللہ کیوں کھٹکتی ہے! ایاز میر

حزب اللہ کے گناہوں کی فہرست بہت لمبی ہے۔ پہلی بات یہ کہ اُس کا تعلق شیعہ مسلک سے ہے۔ یہ امر بھی قابلِ معافی ہوتا اگر یہ لبنانی تنظیم اتنی جنگجو (milit...

Follow

Facebook

ڈیلی موشن

سوشل میڈیا لنکس

ہم سے رابطہ

ایمیل: This email address is being protected from spambots. You need JavaScript enabled to view it.

ویبسائٹ http://www.shiitenews.org