ہر زمانےمیں مفتی نعیم جیسے لوگ ،مفتی جیسے مقدس نام کا بدنام کرتے ہیں،سنی اتحاد کونسل

کیٹیگری پاکستان
Thursday, 07 May 2015 00:00

مولائے متقیان امیرالمومنین علیہ سلام کے عاشق چاہئے سنی ہوں یا شیعہ دونوں مفتی نعیم اینڈکمپنی جامعہ بنوریہ کی جانب سے مولود کعبہ امیرالمومینن علیہ سلام کی جائے ولادت خانہ کعبہ کا انکار کرنے پر آگ بگولہ ہیں، اسی طرح کا اظہار اہلسنت عوام کی نمائندہ جماعت سنی اتحاد کونسل نے اپنی سوشل میڈیا پیج پر کیا ، مفتی نعیم کے فتویٰ والی خبر کی امیج پر سنی اتحاد کونسل نے کچھ اسطرح اظہار کیا کہ" ہر زمانے میں ایسے (مفتی نعیم ) جیسے جاہل لوگ مفتی جیسے مقدس نام کو بدنام کرتے ہیں "۔

مفتی نعیم کے فتویٰ پر شدید ردعمل، تاریخ مسخ کرنے پر FIR درج کرنے کا مطالبہ

مفتی نعیم کی حماقت کا جواب وچیلنج

مفتی نعیم کی حماقت کا جواب وچیلنج

کیٹیگری پاکستان
Thursday, 07 May 2015 00:00

مفتی نعیم ملعون کا مولا علی (ع) کے حوالے سے دیا گیا فتویٰ پڑھیں

ڈاکٹر طاہر القادری کا مفتی نعیم کو کھرا جواب

MoftiNaeem reply

مفتی نعیم کی حماقت کا جواب وچیلنج

ہر زمانےمیں مفتی نعیم جیسے لوگ ،مفتی جیسے مقدس نام کا بدنام کرتے ہیں،سنی اتحاد کونسل

مولا علی(ع) کی ولادت کعبہ میں ہوئی،طاہر القادری کا ناصبی مفتی نعیم کو جواب

کیٹیگری پاکستان
Tuesday, 05 May 2015 00:00

ڈاکڑ طاہر القادری نے امیرالمومینن علیہ سلام کی کعبہ میں ولادت کے حوالے سے ایک خطاب میں کہا کہ میں سوچتا تھا کہ آخر کیون علی علیہ سلام کی ولادت کعبہ میں ہوئی اس حوالے سے میں نے بہت مطالعہ کیا،لیکن مجھے اس کا جواب جب ملا جب میں نے مولا علی شیر خدا علیہ سلام اور جناب زہرا (س) کی شادی کے حوالے سے تاریخ کا مطالعہ کیا، تب مجھے سمجھ آیا کہ اللہ یہ چاہتا تھا کہ دلہن مصطفیٰ کے گھر کی ہو تو لڑکا میرے گھر کا ہو۔

دوسری جانب ناصبی مفتی نعیم ہے جو بغض علی میں مسلمہ تاریخ حقائق کا انکار محض دشمنی علی میں سرانجام رہا ہے۔

qadri

حضرت علی کی ولادت خانہ کعبہ میں نہیں ہوئی، دشمن علی مفتی نعیم کا فتویٰ

کیٹیگری پاکستان
Tuesday, 05 May 2015 00:00

شیعت نیوز: بغض علی میں لوگ اس قدر بڑھ گئے کہ تاریخ کی مستند ترین روایات اور احادیث کا ٹھکراناشروع کردیا جانے لگا، 14 سو سال بعد بھی علی و آل علی سے دشمنی نہیں چھوڑی گئی ،معاویہ و یزید جو خاندان رسالت (ص) کے بنیادی ترین دشمن تھے انکے پیروکار آج بھی علی و آل علی (ع) پر شب و ستم کررہے ہیں، کہیں محبان علی (ع) کے قتل کا فتویٰ دیکر تو کہیں تاریخ میں موجود فضال اہلیبت (ع) کا انکار کرکے۔

جامعہ بنوریہ جو دیوبندی مکتب فکر کا پاکستان میں مشہور ترین مدرسہ ہے ،جسکے مہتتم مولوی مفتی نعیم ہیں ،کی جانب سے ایک ایسا فتویٰ انکی اپنی سرکاری ویب سائیٹ ہر دیکھنے کو ملا جس نے مفتی نعیم کے چہرے پر موجود پھٹکار اور بے نوری ہونے کی وجہ سمجھادی ۔چونکہ موصوف بغض علی (ع) میں مبتلا ہیں اسی وجہ سے خدا نے انکے چہرے کو بے نور اور پھٹکار سے بھرپور بنادیا ہے۔

موصوف کے مدرسہ کے دارلافتویٰ نے تاریخ کی سب سے مستند ترین حقیقت کو صرف دشمنی علی ابن ابی طالب علیہ سلام میں ٹھکرادیا ،کہتے ہیں کہ حضرت علی (ع) کی ولادت خانہ کعبہ نہیں ہوئی بلکہ شعب ابی طالب میں ہوئی، یہ فتویٰ ایک سوال کے جواب میں دیا گیا جس میں ساحل نے سوال کیا کہ !کیا حضرت علی (ع) خانہ کعبہ میں پیدا ہوئے؟ ، تو جواب میں مفتی نعیم کی ناصبی ٹیم کا کہنا تھا کہ" رائج قول کے مطابق سیدنا علی (ع) کی ولادت مکہ کی ایک وادی شعب ابی طالبؑ میں ہوئی" یعنی سرے سے ہی اس وہابی مدرسہ نے خانہ خدا میں ولادت امیر المومینن علیہ سلام کو رد کردیا، ان حضرات کا بغض امیرالمومینن علیہ سلام کا شکار ہونے کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

binoriafatwa

IMG 1483

اس کے برعکس شیعہ و سنی دنوں مسلمانوں کی مستندترین کتاب، علماء، اور محققین کا اس بات پر متفقہ اجماع ہے کہ امیرالمومینن علیہ سلام کی ولاد ت خانہ خدا (ص) میں ہوئی۔اس ناصبی گروہ کے جواب میں چند تاریخ حوالہ جات درجہ ذیل ہیں۔

کتاب : زینت المحافل کے مصنف امام عبدالرحمن ابن عبدالسلام شافی جو آج سے 500 سال قبل گذرے ہیںاپنی کتاب کے صحفہ 659 پر لکھتے ہیں کہ: حضرت کی کی ولادت خانہ کعبہ کے اندر ہوئی ، مزید تفصیل ذیل میں دی گئی تصویر میں ہے۔

zinat mahafil

اسی طرح مدارج النبوت میں شیخ عبدالحق محدث دہلوی نے بھی حضرت علی کعبہ میں ولادت کا صحیح قرار دیا

Madri quran
اسکے علاوہ بھی بہت سے تاریخ حوالے موجود ہیں ،لیکن ہمارا مقصد صرف مفتی نعیم اینڈ کمپنی کو بے نقاب کرنا تھا کہ یہ ہی وہ گروہ ہے جو ناصبی اور بغض علی(ع) میں گرفتار بیمار گروہ ہے۔

سعودی مشیر اعلی کو دیوبندی چندہ خور مولویوں نے گھیر لیا

کیٹیگری پاکستان
Friday, 24 April 2015 00:00

شیعت نیوز کو امت اخبار سے ملنے والی یہ خصوصی رپورٹ ،ملک جی جید دیوبندی علمائے کرام اور مفیتیان عظام سعودی عرب کی حمایت کے عوض چندے وصولی کی فائلیں لے کر قطار میں کھڑے ہوں اور ان میں من وتو کی تفریق مت گٗی ہو،قصہ کچھ یوں ہے کہ سعودی حکومت کے مشیر اعلیٓ برائے مذہبی امورڈاکٹر عبدالعزیز العمار15اپریل کو کراچی آئے اور انہوں نے تکفیری کی آمچگاہ سعودی قونصل خانے میں شہر قائد کی چنیدہ دیوبندی علما مفتی اور بعض اہم احباب مدعو کئے تاکہ یمن بحران پر سعودی حکومت کی پالیسی سے آگاہ کر سکیں ،ڈاکٹر عبدلعزیز نے تقریرکی جس میں سعودی پالیسی کی تفصیل سے وضاحت کی گئی تھی،لیکن تقریرکے بعد مدعو مہانوں میں اس وقت ہڑبونگ مچ گٗی ،جب ایک مولوی صاحب اپنی ضروریات کی فائل لے کر سعودی مشیر کے قریب پہنچے اور ان سے ٹوٹی پھوٹی عربی میں اپنی غربت اور مدرسے کی ضروریات کیلئے فریاد کی تب جامع مسجد طوبیٰ دیفنس سوشائٹی کے تکفیری پیش امام اور باوقار عالم دین مفتی عبدالروف بطور ترجمان فرائض انجام دے رہے تھے ،انہوں نے مذکورہ عالم کی مضحکہ خیز عربی کو درست لباس پہنا کر مہمان خصوصی کی میں پیش کیا بس بھر کیا ایک ہنگامہ مچ گیا ،ہر شخص بمعہ جبہ دستار وریش و فش چندے کی لائن میں لگ گئی،ترجمان کے لیے مشکل ہوگئی کہ ہر شخص ان کی دامنْ حریصانہ کھینچ رہا تھا ،پاکستان کے ایک بڑے دیوبندی مفتی صاحب زرا تاخیر سے تشریف لائے،ان کے ساتھ ان کا صاحبزادے بھی تھے،انہوں نے چندہ فائلوں کی برسات دیکھی تو جھٹ کاغذ کا ایک ٹکڑا مانگ کر اس پر اپنی ضروریات لکھیں اور بذریعہ ترجمان سعودی مشیرکی خدمت میں پیش کردیں ۔ایک اور دینی سیاسی رہنما ٹیلیفون پر فحاش گالیاں دیتے پائے گئے ،گالیاں اسے پڑرہی تھیں جس نے انہیں مدعو کرایا تھا اور اس لیے پڑ رہی تھیں کہ اس نے چندے کی فائلوں والے ایونٹ کا زکر نہیں کیا تھا،ورنہ وہ بھی اپنی ضروریات کا پرچہ ساتھ لاتے ،مذکورہ رہنما کراچی کے ایک بڑے دینی ،سیاسی رہنما اور پارٹی سربراہ کے بیٹے ہیں ،والد صاحب مرحوم ہوچکے ہیں اور صاحبزادے نے ان کی جگہ سنبھال لی ہے ،والد صاحب پر سعودی ریال حرام تھے بیٹے پر حلال ہو۔امت کے ذریعے کے بقول وہ ٹک ٹک دیدم دم نہ کشیدم کی تصویر بنے ساری صورتحال دیکھتے رہے ،ان کے ان کے بقول گزشتہ دنوں ایک میگا مالیاتی اسکینڈل کے حوالے سے شہریت پانے والے ایک بھاری بھر کم مفتی نعیم بھی فائل تھامے مالی فوائد سمیٹنے والوں کی صف میں کھڑے تھے ،اس سارے میں غول میں صرف دو علما ایسے تھے جنہوں نے چندہ وصولی کی کوشش نہیں کی،ان میں مفتی عبدلروف تھے جو ترجمانی کے فرائض انجام دے رہے تھے ،اور دوسرے ڈاکٹر عبدلرازق سکندر تھے ،جو خاموشی سے ایک کونے میں کھڑے یہ منظر دیکھ رہے تھے ،باقی دیوبندی مولوی مفتیان چندے کے لیے ایسے لپک رہے تھے کہ سعودی مشیر کو جان چھڑانا مشکل ہوگیاوہ آرام کے لیے قونصل خانے کی پہلی منزل پر جانا چاہتے تھے لیکن چندہ خور مولویوں نے انہیں اس طرح گھیرا کہ ان کا جانا مشکل ہوگیا

umat

جامعہ بنوریہ میں تحفظ آل سعود کے لئے کالعدم تنظیموں کا اجلاس

کیٹیگری پاکستان
Tuesday, 21 April 2015 00:00

جامعہ بنوریہ کراچی میں مفتی نعیم کی قیادت میں آل سعود کی بادشاہت کو درپیش خطرات کے پیش نظر کالعدم تنظیموں کا اجلاس منعقد ہو ا جس میں دہشتگردوں نے مفتی نعیم کی صدارت میں آل سعود کو یقین دلاوایا کہ پاکستان کے دہشتگرد انکی تحفظ کے لئے ہر دم تیار ہیں۔ یہ اجلاس گذشتہ روز منعقد ہو ا جس میں دہشتگردی میں ملوث مدارس کے سربراہوں سمیت کالعدم سپاہ صحابہ کے اورنگزیب فاروقی،کالعدم جماعت الدوۃ ،کالعدم لشکر جھنگوی سمیت کئی دہشتگرد تنظیموں نے سربراہوں نے شرکت کی۔ اجلاس میں آل سعود کی حمایت میں ایک ریلی نکالنے کا بھی اعلان کیا گیا جس کا عنواں لبیک یا حرمین ہوگا، تاکہ لوگوں کو کعبہ کے نام پر بے وقوف بنایا جاسکے،۔

واضع رہے کہ یہ اجلاس سعودی وزیر برائے مذہبی امور صالح بن عبدالعزیز کی جانب سے سعودی کونسل خانے میں مفتی نعیم کو دی گئی ہدایت اور ریال کے نتیجے میں منعقد کیا گیا ہے ،سعودی وزیر نے پاکستان میں سعودی مفادات کے تحفظ کے لئے مفتی نعیم کو ذمہ دار بنایا ہے ،جبکہ دیگر سعودی آلہ کاروں کو بھی مفتی نعیم سے مربوط ہونے کی ہدایت کیں ہیں، اب مفتی نعیم دہشتگرد تنظیمں جو سعودی ریال پر کام کررہی ہیں انکے پاکستان میں سہولت ہونگے۔

سعودی وزیر کی پاکستان میں غیر سفارتی سرگرمیاں جاری، کالعدم جماعتوں سمیت ہم خیال صحافیوں سے ملاقات

کیٹیگری پاکستان
Monday, 13 April 2015 00:00

یمن تنازعہ پر پاکستانی پارلیمنٹ کے اجلاس میں سعودی عرب کو یمن میں پاکستانی فوج نا بھیجنے کے دو ٹوک جواب کےبعد سعودی وزیر شیخ صالح بن عبدالعزیز کی اچانک پاکستان آمد اور انکی کھلے عام غیرسفارتی نقل حرکت پر پاکستان کے مقتدر حلقوں میں تشویش پائی جارہی ہے، اطلاعات کے مطابق سعودیہ عرب کی وزارت مذہبی امور کے نائب وزیر کل گذشتہ روز پاکستان کے ہنگامی دورے پر پہنچے ہیں،بظاہر یہ دورہ پاکستان کو یمن کی سعودی جنگ میں شامل کرنے پر زور دینے کے لئے کیا گیا ہے لیکن گذشتہ روز سے اس سعودی وزیر کی غیر سفارتی سرگرمیاں بھی دیکھنے میں آئی ہیں ،جس میں اس وزیر نے پاکستان میں موجود کالعدم تنظیموں ،مدارس ،صحافیوں سمیت کئی شخصیات سے غیرسرکاری ملاقات کی ہیں۔

اطلاعات ہیں کہ سعودی وزیر صالح بن عبدالعزیز نے کالعدم جماعتوں اہلسنت ولجماعت ،انصار امہ سمیت دیوبندی و وہابی مدارس کے سربراہوں بالشمول مولانا مفتی محمد نعیم سے ملاقا ت کی ہے اور انہیںپاکستانی حکومت پر مذہبی زور ڈالنے کے لئے بدلے امداد کی آفر کی ہے، اسی سلسلے میں گذشتہ روز کالعدم دہشتگرد جماعتوں نے مشترکہ پارلیمنٹ ہاوس کے سامنے احتجاجی ریلی نکالی جس میں اعلانیہ ملک کی منتخب پارلیمنٹ کی جانب سے پاس کی گئی قرار داد کاانکار کیا گیا اور پاک پارلیمنٹ کے خلاف نعرے بازی بھی کی۔ یہ اطلاعات بھی موصول ہوئی ہیں کہ دہشتگرد کالعدم جماعتوں کو سعودی وزیر نے سعودی عرب کے ساتھ یمن پر جارحیت میں شامل ہونے کی دعوت دی ہے اس مد میں سعودی وزیر نے ان کالعدم دہشتگردوں جماعتوں کوبھاری امداد دینے کا بھی وعدہ بھی کیا ہے،کذشتہ روز کالعدم دہشتگرد تنظیم سپاہ صحابہ کا سربراہ احمد لدھیانوی کا بیان اسی تناظر میں ہے، اسکا کہنا تھا کہ اگر پاک فوج سعودی امداد کو نہیں جاتی تو وہ اور انکے دہشتگرد سعودی عرب کو تحفظ فراہم کرنے میں پیچھے نہیں ہٹیں گے۔

اسطرح پاکستان کی سرزمین پر کھلے عام دہشتگرد تنظیموں کا سعودی حمایت میں سامنے آجانا اور سعودی وزیر کی ان تنظیموں سے ملاقات اس بات کوثابت کرتی ہے کہ پاکستان کی سرزمیں پر نفرتوں کی آگ بھڑکانے والا کوئی اور ملک نہیں بلکہ ہمارا سب سے پرانا برادر اسلامی ملک سعودی عرب ہے۔

دوسری جانب اس سعودی وزیر نے کئی صحافیوں جس میں سلیم صحافی، احمد قریشی ،عامر لیاقت حسین ،زاہد حسین ،سلطان لاکھانی،سلمان غنی سہرفرست ہیں سے بھی ملاقات کی ہے اور میڈیا پر سعودی جارحیت کے حق میں رائے عامہ بنانے کا حکم کیا ہےجبکہ لاکھوں ڈالر کی پیشکش بھی پیکیج میں شامل ہے۔

ایسے موقع پر جب سعودی عرب اور مذہبی دہشتگردوں کی جانب سے بھرپور کوشیش کی جارہی ہے کہ یمن میں لگی آگ کو فرقہ وارنہ رنگ دیا جائے، سعودی وزیر کی پاکستان میں غیر مشکوک سرگرمیاںپاکستانی قوانین سمیت بین الاقومی قوانین کی بھی خلاف ورزی ہے ، اس معمالے پر وفاقی وزارت داخلہ اور خارجہ فوری طور پر نوٹس ہیں۔

مفتی نعیم نے سعودی عرب میں ریت کے طوفان کا ذمہ دار ایران کو قرار دیدیا

کیٹیگری پاکستان
Thursday, 02 April 2015 00:00

جامعہ بنوریہ العالمیہ کے مہتمم مفتی محمد نعیم نے سعودی عرب سمیت دیگر عرب ممالک میں ریت کے طوفان کا ذمہ دار ایران کو قرار دیدیا۔ تفصیلات کے مطابق ان خیالات انہوں نے کالعدم سپاہ صحابہ کے مرکزی صدر اورنگزیب فاروقی سے ٹیلی فونک گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ ریت کا یہ حملہ صرف سعودی عرب پر نہیں بلکہ ان ممالک پر بھی کیا گیا ہے کہ جو یمن پر جارحیت میں شریک تھے۔ مفتی نعیم نے ریت کے طوفان کو حرمین شریفین پر حملہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب کی سالمیت کیلئے میرا بیٹا تو نہیں لیکن عالم اسلام کا بچہ بچہ قربانی دینے کو تیار ہے۔

نوٹ: یہ خبر اس انداز میں فقط اس لئے بنائی گئی ہے کہ ان افراد کی طرف سے ایران کیخلاف بس یہی الزام لگنا باقی رہ گیا تھا،ورنہ جو حقیقت ہے وہ سب عوام کے سامنے ہے، یمن میں ایران نے کوئی فوجی مداخلت نہیں کی، بلکہ یمنی عوام نے اپنے حق کیلئے آل سعود، امریکہ اور اسرائیل کے پٹھو حکمرانوں کو حکومت سے نکال باہر کیا ہے۔ ذرا یہ سوچیں یہی تحریک گزشتہ دنوں پاکستا ن تحریک انصاف اور پاکستان عوامی تحریک نے نواز شریف کی حکومت گرانے کیلئے چلائی تھی تو کیا عمران خان کی پیچھے بھی ایران تھا۔ مفتی نعیم صاحب ذرا یہ تو بتایئے کہ مصر میں محمد مرسی کی حکومت کو گرانے کیلئے کیا ایران نے سعودی عرب کو پیسے دیئے تھے، نہیں بلکہ یہ سعودیہ ہی تھا کہ جس نے اسرائیل کے مفاد کو مدنظر رکھتے ہوئے امریکہ کے ساتھ مل کر محمد مرسی کی حکومت کا خاتمہ کیا۔ خیر آپ سے کوئی شکایت بھی نہیں ہے کیونکہ اتنے سال سے ریال سے پیٹ بھرا ہے تو اس کا حق تو ادا کرنا پڑے گا۔

دیوبندی مفتی نعیم نے کالعدم دہشت گرد تظیم کی حمایت کا اعلان کر دیا

کیٹیگری پاکستان
Friday, 13 March 2015 00:00

کراچی: ١٢ مارچ ٢٠١٥ – کراچی کے سب سے بڑے دیوبندی مدرسہ جامعہ بنوریہ کے مہتمم مفتی نعیم نے کالعدم تکفیری دہشت گرد جماعت سپاہ صحابہ کے ساتھ گُٹھ جوڑ کرلیا ہے – خفیہ اطلاعات کے مطابق چند روز قبل مفتی نعیم اور اورنگزیب فاروقی کی ملاقات ہی جس میں جامعہ بنوریہ مدرسہ کے درجنوں طالب علموں نے لشکر جھنگوی، سپاہ صحابہ اور طالبان میں عملی اور مسلح شمولیت کا فیصلہ کیا -
اطلاعات کے مطابق مفتی نعیم کے مدرسے میں بڑی تعداد میں افغان اور پاکستانی پشتون، اُزبک اور چیچن موجود ہیں جنہیں سنی صوفی عقیدے سے ہٹا کر تکفیری دیوبندیت کی تعلیم دی جاتی ہے۔ سُنی تحریک، ایم کیو ایم اور پیپلز پارٹی کے متعدد ارکان کو قتل کرنے والے دہشت گردوں کا بھی مفتی نعیم ہی کے مدرسے سے تعلق ہے

دیوبندی مفتی نعیم لال مسجد کو بچانے میدان میں آگئے

کیٹیگری پاکستان
Tuesday, 23 December 2014 00:00

جامعہ بنوریہ کےمہتم مفتی نعیم کا کہنا تھا وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار کا مدارس اور علما کے مثبت کردار کا اعتراف قابل تعریف ہے
دیوبندی مفتی نعیم نے جامعہ بنوریہ عالمیہ کے شوری و مجلس تعلیمی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کپ مولانا عبدالعزیز کو بنیاد بنا کر لال مسجد و جماعہ حفضہ کیخلاف کسی قسم کی سازش کو کامیاب نہیں ہونے دیاجائے گا،وفاقی وزیر داخلہ چوھدری نثار کا مدارس اور علما کرام کے مثبت کردار اور خدمات کا اعتراف قابل تعریف ہے ،اہل مدارس کے خلاف پروپیگنڈہ کرنے والوں نے کبھی زندگی میں کسی مدرسے کا دورہ نہیں کیا صرف مغرب کی خوشنودگی کیلیے مدارس ،اسلام و شعائر اسلام کے خلاف زبان درازی کی جارہی ہے اہل مدارس نے ماضی میں بھی ملک و

Page 3 of 4

شیعہ نسل کشی رپورٹ

Shia Genocide 2016

حلب میں داعش کو شکست

حلب شام میں داعش کو شکست فاش کی لمحہ بہ لمحہ خبریں

اسلام و پاکستان دشمن مفتی نعیم

Mufti Naeem

مقبوضہ کشمیر و فلسطین

ایندھن کی قلت، غزہ کا سب سے بڑا اسپتال بند ہونے کا خدشہ

ایندھن کی قلت، غزہ کا سب سے بڑا اسپتال بند ہونے کا خدشہ

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک)فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی میں ایک بڑے اسپتال ’الشفاء میڈیکل کپملیکس‘ نے ایندھن کی عدم دستیابی اور ادویات کی قلت کے ب...

مقالہ جات

طاغوتی قوتوں کے خلاف جہاد، عاشورا کا سرمدی پیغام

طاغوتی قوتوں کے خلاف جہاد، عاشورا کا سرمدی پیغام

اگرچہ واقعہ عاشورا 61 ہجری میں پیش آیا لیکن چونکہ اس کا مقصد ایسی حکومت کے خلاف جہاد تھا جس کی بنیاد دھوکے، جھوٹ اور لالچ کی سیاست پر استوار تھی اور و...

Follow

Facebook

ڈیلی موشن

سوشل میڈیا لنکس

ہم سے رابطہ

ایمیل: This email address is being protected from spambots. You need JavaScript enabled to view it.

ویبسائٹ http://www.shiitenews.org