کاپی رائٹ کی وجہ سے آپ یہ مواد کاپی نہیں کر سکتے۔
پاکستان

اوماڑہ سے ایران باڈر 450 کلومیٹر دور ہے، دہشتگرد کیسے اندر آگئے، اختر مینگل کا سوال؟

شیعیت نیوز بلوچستان سے منتخب ایم این اے اختر مینگل نے گذشتہ روز پارلیمنٹ میں تقریر کرتے ہوئے وزیر خارجہ کو آڑے ہاتھوں لیا اور کہا کہ وزیر خارجہ کا اوماڑہ واقعہ پر انتہائی کمزور بیان تھا۔

انہوں نے ہزارہ برادری کے قتل عام کی شدید مذمت بھی کی اور کہا کہ چل کر دیکھیں کہ ہزارہ برادری کو محصور کردیا گیا ہے وہ منڈی بھی جاتے ہیں تو سیکورٹی کے ساتھ۔

تفصیلات کے مطابق وزیرخارجہ شاہ محمود کی جانب سے اوماڑہ واقعہ کا الزام ایران پر لگانے پر رکن قومی اسمبلی بلوچستان اختر مینگل صاحب کا ردعمل دیتے ہوئے اسکی شدید مذمت کی اور کہا کہ وزیر خارجہ کو جغرافیائی سے واقف ہونا چاہئے انہوں نے کہا کہ مکران ہائی وے کوسٹل سے ایران بارڈر 450km کا سفر ہے درمیان میں 50 کے قریب چیک پوسٹس ہیں کیا دہشت گرد 60 روپے لیٹر والے ہیلی کاپٹر پہ آئے تھے۔

واضح رہے کہ وزیر اعظم عمران خان کے دورہ ایران سے قبل ہی وزیر خارجہ نے پریس کانفرنس کرکے اوماڑہ سانحہ کے ذمہ دار دہشتگردوں کئ پشت پناہی کا الزام ایران پر لگایا تھا، وزیر خارجہ کی اس پریس کانفرنس پر ماہرین کا کہنا تھا کہ یہ وزیر اعظم کے دورہ ایران کو ثبوتاژ کرنے کی سازش ہے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close