اہم ترین خبریںیمن

دارالحکومت صنعا کے شمال مشرقی علاقے نہم پر سعودی اتحاد کی بمباری

جارح سعودی عرب کے جنگی طیاروں نے نہم علاقے کو تین بار اپنے حملوں کا نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں اس علاقے کو بھاری نقصان پہنچا ہے ۔ نہم علاقے پر مفرور صدر منصور ہادی سے وابستہ عناصر کی کارروائیوں کے ساتھ ہی گذشتہ دو ہفتے سے اس علاقے پر جارح سعودی اتحاد وحشیانہ حملے کررہا ہے ۔ اگر چہ ان کارروائیوں میں جارح سعودی اتحاد کو بھاری نقصان اٹھانا پڑا ہے اور چارسال کے بعد نہم کا علاقہ یمنی فوج اور انصاراللہ کے کنٹرول میں آگیا ہے لیکن جارح سعودی اتحاد کی بمباری بدستور جاری ہے۔ ایک اور رپورٹ کے مطابق صوبہ مارب میں منصور ہادی کی مستعفی حکومت سے وابستہ عناصر کے اسلحے اور گولہ بارود کے ایک گودام میں دھماکا ہوا ہے۔ذرائع ابلاغ نے اس دھماکے میں بھاری جانی و مالی نقصان کا اندیشہ ظاہر کیا ہے۔ ابھی تک کسی بھی گروہ نے اس دھماکے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔ متحدہ امارات کی حمایت یافتہ جنوبی یمن کی عبوری کونسل کے فوجیوں اور سعودی عرب سے وابستہ منصور ہادی کے فوجیوں کے درمیان جھڑپوں کا سلسلہ چھے مہینے پہلے سے جاری ہے۔ دونوں گروہوں کے درمیان جنوبی یمن میں اقتدار کی تقسیم اور جھڑپوں کا سلسلہ بند کرنے کے لئے ریاض میں ہونے والے حالیہ سمجھوتے کے باوجود اختلافات اور جھڑپوں کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close