کاپی رائٹ کی وجہ سے آپ یہ مواد کاپی نہیں کر سکتے۔
ایران

رہبرانقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای سے پاکستان کے وزیراعظم عمران خان کی ملاقات

رہبرانقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای سے پاکستان کے وزیراعظم عمران خان کی ملاقات کا پاکستان کے ذرائع ابلاغ میں وسیع پیمانے پر انعکاس ہوا ہے۔

پاکستانی اخبار ڈان کی شہ سرخی: وزیراعظم عمران خان کا ایران میں دوسرا روز

وزیراعظم عمران خان نے ایران کے دورے میں دوسرا روز مصروف گزارا جہاں انہوں نے ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ العظمی خامنہ ای کے علاوہ صدر حسن روحانی سے براہ راست ملاقات کی۔

وزیراعظم عمران خان کی سربراہی میں پاکستانی وفد نے ایرانی وفد سے مذاکرات کیے اور کئی اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

دونوں ممالک کے وفود کے درمیان سرحدی معاملات پر بھی گفتگو کی گئی اور سرحدی محافظین اور سرحد کی حفاظت کے لیے ‘جوائنٹ ریپڈ ری ایکشن فورس’ کے قیام پر بھی اتفاق ہوا ہے اور دونوں ممالک کے درمیان تجارتی تعلقات کو مزید وسعت دینے پر بھی غور کیا گیا۔

روزنامہ پاکستان نے رہبر انقلاب اسلامی سے عمران خان کی ملاقات کی بڑی تصویر لگاتے ہوئے لکھا

ایرانی صدر حسن روحانی نے دورہ پاکستان کی دعوت قبول کرلی، وزیر اعظم کے دورہ ایران کے مشترکہ اعلامیے کے مطابق دونوں ممالک کے درمیان صحت کے شعبے میں تعاون کی یادداشت پر دستخط ہوئے جبکہ ایران سے بجلی کی در آمد پر اتفاق کیا گیا۔

وزیراعظم عمران خان کے 2 روزہ دورہ ایران کا مشترکہ اعلامیہ جاری کردیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ پاکستان اور ایران نے دو طرفہ تعلقات مزید مضبوط کرنے کے عزم کا اعادہ کیا اور دوطرفہ معاہدوں کی جلدتکمیل پرزور دیا۔ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ مشترکہ سرحدیں امن اوردوستی کیلئے ہونی چاہئیں،سیاسی اور دفاعی شعبوں میں تعاون کیلئے اقدامات کرناہوں گے۔

مشترکہ اعلامیے میں خطے میں امن وسلامتی کیلئے افغان مذاکرات کی ضرورت پربھی زور دیا گیا۔ اعلامیے میں کہا گیا کہ آزاد اور خود مختار فلسطین فلسطینی عوام کاحق ہے۔ دونوں ملکوں نے مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کرنے کا مطالبہ کیا۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close