مقبوضہ فلسطین

صدی کی ڈیل کا مقصد قضیہ فلسطین کا تصفیہ کرنا ہے۔ صالح العاروری

شیعت نیوز: حماس کے سیاسی شعبے کے نائب صدر صالح العاروری نے کہا ہے کہ صدی کی ڈیل کے امریکی منصوبے کا مقصد قضیہ فلسطین کا تصفیہ کرنا ہے مگر فلسطینی قوم کی صفوں میں اتحاد اس منصوبے کو ناکام بنانے کے لیے کافی ہے۔

رپورٹ کے مطابق ہفتے کے روز لبنانی پارلیمنٹ کے اسپیکر نبیہ بری سے بیروت میں ملاقات کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے العاروری کا کہنا تھا کہ صدی کی ڈیل کو ناکام بنانے کے لیے فلسطینی قوم کی صفوں میں مکمل اتحاد ہے اور ہم اس سازش کو آگے نہیں بڑھنے دیں گے۔

ایک سوال کے جواب میں العاروری نے کہا کہ ہم نے لبنان میں فلسطینی پناہ گزینوںکے مسائل پر بات چیت کی۔ لبنانی اسپیکر پرواضح کیا ہےکہ فلسطینی پناہ گزینوں کو اپنے لبنانی بھائیوں کی طرح باعزت زندگی گذارنے کا حق ہے۔ لبنان میں فلسطینیوں کو ان کے معاشی حقوق فراہم کرنا ان کے حق واپسی کے متصادم نہیں۔

انہوںنے کہا کہ ہم لبنان میں فلسطینی پناہ گزینوں کی مستقل آباد کاری کے کسی بھی فارمولے کو قبول نہیں کریں گے۔ وطن واپسی فلسطینیوں کا تاریخی حق ہے اور وہ وطن میں آباد کاری کے سوا اور کوئی آپشن قبول نہیں کریں گے۔

العاروری کا کہنا تھا کہ فلسطینی قوم کو حق خود ارادیت اور آزادی کے حصول کے لیے بندوق اُٹھانے سمیت تمام راستے اختیار کرنے کا حق ہے۔ انہوںنے فلسطینی دھڑوں کے درمیان اتحاد اور یکجہتی کی ضرورت پر زور دیا۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close