ایران

کورونا وائرس کا مقابلہ کرنے کے لئے عالمی تعاون ناگزیر ہے۔ آیت اللہ اعرافی

شیعت نیوز: قم کے دینی درسگاہوں کے سربراہ آیت اللہ اعرافی نے کورونا وائرس کے پھیلاؤ پر تبصرہ کرتے ہوئے اس عالمگیر وبائی مرض کے خلاف مقابلہ کرنے کیلئے عالمی تعاون اور امریکی ظالمانہ پابندیوں کے خاتمہ کی ضرورت پر زور دیا۔

ان خیالات کا اظہار آیت اللہ علی رضا اعرافی نے منگل کے روز مصر کے مفتی احمد الطیب شیخ الازہر کے نام میں ایک خط میں کیا۔

آیت اللہ اعرافی نے مزید کہا کہ ہم اپنی تعلیمی، سائنسی اور ثقافتی سرگرمیوں کی روک تھام نہیں چاہتے ہیں اور ان سرگرمیوں کا سلسلہ جاری رکھنے کیلئے سائبر اسپیس اور ٹیکنالوجی کی صلاحیتوں کو بروئے کار لائیں گے۔

آیت اللہ اعرافی نے مزید کہا کہ قم دینی درسگاہوں نے اس حوالے سے بنیادی اقدامات اٹھائے ہیں اور سائنسی، تعلیمی اور ثقافتی تجربات کے تبادلہ پر تیار ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم بین الاقوامی تعلیمی اور دینی مراکز کے ساتھ تعاون کا نیا باب کھولنے پر تیار ہے۔

یہ بھی پڑھیں : پاکستان ایران پرسے پابندیاں ختم کرانےکیلئے اپنابھرپورکرداراداکررہاہے،شاہ محمودقریشی

دوسری جانب ایران کے پاستور انسٹی ٹیوٹ کے سربراہ نے کہا کہ ایران کوروناٹیسٹ کیٹس کی پروڈکشن کے میدان میں اپنے پیروں پر کھڑا ہوچکا ہے اور دیگر ملکوں کو بھی برآمد کرنے کے لئے تیار ہے۔

ایران کے پاستور انسٹی ٹیوٹ کے سربراہ علی رضا بیگلری نے بدھ کو ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اعلان کیا کہ ایران میں کورونا کے ٹیسٹ کے لئے تیار ہونے والی کٹس میں کورونا وائرس کی معمولی اور خفیف سبھی علامتوں کے حامل مشتبہ افراد کی جانچ کرنے کی صلاحیت موجود ہے اور یہ کورونا کی مولی کیولر ٹیسٹ کٹ ہے جس کی عالمی ادارہ صحت ڈبلیو اچ او نے بھی تائید کی ہے اور اگر صحیح طریقے سے ٹیسٹ لیا جائے تو اس کے نتائج پر نوے فیصد تک اعتماد کیا جا سکتا ہے۔

بیگلری نے ایران میں پانچ نالج بیسڈ کمپنیوں کے ذریعے کورونا کی مولی کیولر ٹیسٹ کٹس کے پروڈکشن کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ غیر معمولی کامیابی ایک ایسے وقت میں حاصل ہوئی ہے جب ایران بدترین پابندیوں کے دور سے گذر رہا ہے اور دوسرے ممالک سے کٹس کی خریداری کے لئے بینکنگ ٹرانزیکش بھی نہیں کر پا رہا ہے۔

پاستور انسٹی ٹیوٹ کے سربراہ نے اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ ملک میں کورونا وائرس کے ٹیسٹ کی لیبارٹریز کی تعداد نوے تک پہنچ گئی ہے کہا کہ ایران کی وزارت صحت ہر روز بیس ہزار ٹیسٹ انجام دے سکتی ہے اور پابندیوں کے زمانے میں یہ صلاحیت حاصل کر لینا ملک کا انتہائی مضبوط پہلو ہے۔

ایران کی وزارت صحت کے اعلان کے مطابق اب تک ملک میں چوالیس ہزار سے زیادہ افراد کورونا میں مبتلا پائے گئے ہیں جن میں تین ہزار ترپن مریض جاں بحق ہو چکے ہیں جبکہ تقریبا پندرہ ہزار صحتیاب ہونے میں کامیاب بھی ہوئے ہیں۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایرانی محکمہ صحت کے مطابق اب تک ملک میں مجموعی طور پر 44606 کورونا وائرس کا شکار ہوگئے ہیں جن میں سے 2898 افراد کا انتقال ہوگئے ہیں جبکہ 14656 متاثرہ افراد بھی صحت یاب ہوگئے ہیں۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close