عراق

بعثیوں کواقتدارمیں نہيں آنے دیں گے, مجلس اعلائےاسلامی

shiite_mohsenhakim عراق کی مجلس اعلائےاسلامی کے سربراہ کے سیاسی مشیر محسن حکیم نے کہاہے کہ انتخابی امیدواروں کی صلاحیت کاجائزہ لینےوالی  اپیل کمیٹی کا فیصلہ سیاسی ہے اورملت عراق بعث پارٹی کودوبارہ اقتدارمیں آنے کی اجازت نہيں دےگی ۔محسن حکیم نے بعض امیدواروں کے بارے میں نظرثانی کرنےکےسلسلے میں اپیل کمیٹی کے فیصلے پرردعمل ظاہرکرتےہوئے کہا کہ عراق کےآئین کےمطابق بعثیوں کواقتدارمیں لانےکےلئے اس ملک کےعوام کےدشمنوں کی ہرکوشش مسترد اورغیرقانونی ہےاوراس سلسلے میں کوئي بھی بہانہ قابل قبول نہيں ہے۔عراق کی انصاف کونسل نےآئین کی ساتویں شق کےمطابق پارلیمنٹ

 کے پانچ سوسےزيادہ امیدواروں کوصدام کی کالعدم بعث پارٹی کی جانب رجحان رکھنے کی وجہ سے انتخابات میں حصہ لینےسے روک دیاہے، لیکن اپیل کمیٹی نےحال ہی ميں اپنے ایک فیصلے میں اس حکم کوملتوی کردیاہے۔ عراق میں فتنہ بپا کرنے میں سعودی عرب اورامریکہ کا ہاتھ واضح ہے عراق کے میڈیاسیل کے ڈائریکٹرعدنان السراج نےکہاہے کہ عراق میں فتنہ اورعدم استحکام پیدا کرنے کے تعلق سے  امریکہ اورسعودی عرب کا باہمی تعاون ثابت ہوچکا ہے ۔عدنان السراج نے کہا کہ امریکہ اوربعض عرب ممالک بالخصوص سعودی عرب جوعراق میں موجودہ سیاسی عمل سے ناخوش ہيں اس ملک میں فتنہ انگيزی کے ذمہ دار ہيں۔عراق میں اطلاع رسانی کے مرکز کے سربراہ نے برطانیہ سمیت بعض ملکوں میں بعثی گروہوں کی میٹنگوں کی جانب اشارہ کرتےہوئے کہاکہ امریکہ اورسعودی عرب کے حمایت یافتہ گروہوں کےلئے رقم عراق پہنچ چکی ہے اور اس وقت یہ رقم سیاسی فیصلوں پرمنفی نتائج مرتب کرنے کےلئے خرچ ہورہی ہے۔السراج نے کہاکہ عراقی سیاستداں بالخصوص وزيراعظم نوری المالکی نے عراق کے داخلی امورمیں امریکہ اوربعض عرب ممالک کی ہماہنگ مداخلت کے بارےمیں خبردار کیاہےاوراس کی مذمت کی ہے۔

 

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close