عراق

سات مارچ کو ہونے والے انتخابات میں بھرپر شرکت سامراج کے خلاف سیاسی مزاحمت ہے

shiite_news_muqtadda_sadr

معروف عراقی رہنما مقتدیٰ الصدر کا کہنا ہے کہ 7مارچ کو ہونے والے انتخابات میں بھرپور شرکت سامراج کے خلاف سیاسی مزاحمت ہے ،شیعت نیوز کے نمائندے کے مطابق مقتدیٰ الصدر کے دفتر سے جاری ہونے والے ایک بیان میں الصدر پولیٹیکل پارٹی کے سربراہ اور امریکہ مخالف شیعہ رہنما مقتدیٰ الصدر کا کہنا ہے کہ موجودہ انتخابات میں بھرپور اس بات کا ثبوت ہے کہ ہم مکمل طور پر متحد ہیں اور عالمی سامراج (امریکہ ،برطانیہ )کو اپنے ملک سے بے دخل کرنے کے لئے پر عزم ہیں۔انہوں نے اس

تاثر کو رد کر دیا کہ انتخابات میں حصہ لینا بے کار ہے،ان کا کہنا تھا کہ انتخابات میں بھرپور شرکت اس بات کا ثبوت ہے کہ ہم عراق کی سیاسی خود مختاری کے لئے سر گرم عمل ہیں اور عراقی عوام کی خدمت کرنا چاہتے ہیں ۔جبکہ دوسری جانب ایران سمیت دنیا بھر میں موجود عراقی شہریوں نے کل جمعہ کے روز سات مارچ کو ہونے والے عراق کے پارلیمانی انتخابات کے سلسلہ میں اپنا حق رائے دہی استعمال کیا ۔واضح رہے کہ ایران میں عراقی ہائی الیکشن کمیشن کے سربراہ علی عبید کا کہنا ہے کہ ایران میں عراقی شہریوں نے ہماری حکمت عملی کے مطابق انتخابات میں حصہ لیا اور کوئی بھی غیر یقینی صورتحال سامنے نہیں آئی ۔واضح رہے کہ پچاس ہزار سے زائد عراقی شہری جو کہ ایران میں مقیم ہیں نے اپنا حق رائے دہی استعمال کیا،جبکہ عراق کے پارلیمانی انتخابات میں چھ بڑے اتحادوں کے 6200امید وار میدان میں ہیں۔

 

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close