عراق

عراق میں باون امیدواروں کےووٹ کینسل

shiite_iraq_ban-300x202عراق کے الیکشن کمیشن نےپارلیمانی انتخابات کےباون امیدواروں کےووٹوں کوکینسل کردیاہے۔عراق کےاعلی الیکشن کمیشن کےسربراہ فوج الحیدری نےاعلان کیاہے کہ ان باون انتخابی امیدواروں کوملنےوالے ووٹ ،بعث پارٹی سے ان کی وابستگی کی وجہ سےکینسل کئےگئےہيں۔بعض سیاسی ماہرین کاخیال ہے کہ عراق کےالیکشن کمیشن کافیصلہ العراقیہ اتحاد کےامیدواروں کی صورت حال پراثراندازہوسکتاہے۔ عراق کی انصاف کمیٹی کےڈائرکٹرعلی اللامی نےکہاہے کہ جن باون امیدواروں کےووٹ کینسل کئےگئےہيں ان کاتعلق العراقیہ پارٹی سے ہے۔درایں اثنا ایاد علاوی نے بعثی امیدواروں کے ووٹ کینسل کئےجانے کے الیکشن کمیشن کےاقدام پرردعمل ظاہرکرتےہوئے کہاہے کہ وہ اس کامقابلہ کرنےکےلئےمیدان میں اتریں گے۔اس میں کوئي شک نہيں کہ باون امیدواروں کےووٹ کینسل کئےجانےکا عراق کےانتخابی نتائج پراثرپڑےگا۔ اعلان شدہ نتائج کےمطابق العراقیہ اتحاد، حکومت قانون اتحاد سے صرف دو سیٹیں زیادہ حاصل کرسکاہے یہ ایسےحالات میں ہےکہ اول تو یہ کہ مرکزی عدالت نےابھی انتخابی نتائج کی تائید نہيں کی ہے اوردوسرے یہ کہ عراق کےبعض صوبوں میں دھاندھلی کی مکرر شکایتوں کے بعد طےپایاہے کہ صوبہ بغداد کےووٹوں کی دوبارہ گنتی ہاتھوں سے ہوگي ۔ان تمام چیزوں کےباوجود اہم نکتہ یہ ہے کہ عراق کی انصاف کمیٹی کےڈائرکٹر نےتاکید کےساتھ کہاہے کہ الیکشن کمیشن کی جانب سے بعثی امیدواروں کےووٹ کینسل کئےجانے کافیصلہ یقینی ہے اوراس پرنظرثانی نہيں کی جاسکتی ۔ باون بعثی امیدواروں کےووٹ کینسل کردیئے جانےسےپتہ چلتاہے کہ بعث پارٹی اور اس کےداخلی اورغیرملکی حامیوں کےسامنےتمام راستے بند ہوچکےہيں ۔ اس مسئلے سےقطع نظر جوبات واضح ہے وہ یہ کہ بعثی امیدواروں کےووٹ کینسل ہونےسے جس میں بعض کاتعلق العرقیہ اتحاد سےتھا،انتخابی اتحاد پراثر پڑےگا اوریہ بھی ممکن ہے کہ اس سےعراق کےانتخابات میں کامیاب ہونےوالےاتحادوں کی ترتیب میں تبدیلی پیداہو۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close