ایران

علمی شخصیتوں کی شہادت سے ترقی وپیشرفت کی رفتار سست نہيں ہوگی

kashani

تہران کی مرکزی نماز جمعہ آيت اللہ امامی کاشانی کی امامت میں اداکی گئي ۔ خطیب جمعہ تہران نے مخالف سیاسی گروہوں کو علمی دلیلوں اور ثبوتوں کی اساس پرایک دوسرے پرتنقیدیں کرنی چاہیں۔ آيت اللہ امامی کاشانی نے رہبرانقلاب اسلامی کی ھدایات کی یاد دہانی کراتےہوئے کہاکہ سیاسی گروہوں اور پارٹیوں کو چاہئے کہ وہ  ملک کے داخلی حالات کو مدنظررکھتےہوئے افراط وتفریط سے بچیں ۔

 خطیب جمعہ تہران نے کہا کہ سیاسی پارٹیوں اور گروہوں کو قرآن کریم کی تعلیمات کے مطابق اپنی سیاسی گفتگوکرنی چاہیے اور حکمت ، وعظ ونصیحت اور استدلال مناظرے کی بنیادیں ہیں اور خاص شخصیتوں اور سیاسی گروہوں کو سیاسی بحث اور سیاسی گفتگو کو قبول کرنا چاہیے ۔ آیت اللہ کاشانی نے تیس دسمبر عظیم مظاہروں میں شرکت کرنے پرملت ایران کا شکریہ اداکیا اور کہا کہ ان مظاہروں سے یوم عاشورکے دن دشمنوں نے جو سازشیں کی تھیں اور جونعرے لگائےتھے وہ سب ناکام ہوگئے۔خطیب جمعہ تہران نے تہران یونیورسٹی کے پروفیسر مسعود علی محمدی کی شہادت پرتعزیت پیش کرتےہوئے امید ظاہرکی کہ اس تلخ واقعے کےبعد ملک کے سائينسی اور علمی حلقےمزید ترقی کریں گے اور یونیورسٹیوں کو جان لیناچاہیے کہ دشمن کا ھدف کیا ہے اور انہيں اپنی تحقیقات اور تعلیمی سلسلہ جاری رکھنا چاہیے۔

 

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close