ایران

تہران میں عالم اسلام کی طلباتنظیموں کااجلاس

Tehran-Students-Orgاسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کےاسپیکرڈاکٹرلاریجانی نےکہاہےکہ اگرامریکی، صیہونی حکومت کوسقوط سےبچانےکےلئے جعلی مذاکرات کرناچاہتےہيں تووہ جان لیں کہ مضبوط عوامی طاقت ان ہاتھوں کوکاٹ دےگی۔
ہمارےنمائندےکی رپورٹ کےمطابق ڈاکٹرلاریجانی نےآج (سنیچر)تہران میں عالم اسلام کی طلباتنظیموں کےچھٹے اجلاس میں کہاکہ افسوس کہ علاقےکےبعض ممالک اورگروہ اپنےکوصیہونی حکومت کےخلاف جدوجہد سےعاجزسمجھتےہيں اور اپنی بقاکےلئےامریکہ کی مدد کےنیازمند  ہيں ، یہ نعرہ لگاتےہيں کہ مسئلہ فلسطین ایک عرب مسئلہ ہےاوردوسرےملکوں سےاس کاتعلق نہيں ہے۔
ڈاکٹرلاریجانی نےتاکید کےساتھ کہاکہ مسئلہ فلسطین عرب مسئلہ ہونےکےساتھ ہی ، اسلامی اورانسانی مسئلہ بھی ہے اور پوری انسانیت کوفلسطینی عوام کےانجام کےبارےمیں ذمہ داری محسوس کرنی چاہئے۔
واضح رہےکہ فلسطینی انتظامیہ اورصیہونی حکومت پہلی ستمبرسے براہ راست سازبازمذاکرات شروع کرنےوالی ہیں۔
اس کےباوجود کہ صیہونی کالونیوں کی تعمیرکاسلسلہ بندکیاجانا، فلسطینی آوارہ وطنوں کی وطن واپسی اورسرحدوں کےتعین جیسی فلسطینی نتظیموں کی کوئی شرط پوری نہيں ہوئی ہے، فلسطینی انتظامیہ کےصدرمحمودعباس ،فلسطینیوں کی مخالفت کی پرواہ کئےبغیرصیہونیوں کےساتھ مذاکرات کےلئےتیارہوگئےہيں ۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close