متفرقہ

لکھنؤ میں شہادت امام زین العابدین علیہ السلام پر مجالس و ماتم


azadari1

شہر لکھنؤ میں امام زین العابدین علیہ السلام کی شہادت کی مناسبت سے شیعوں کے درمیان غم و اندوہ کا ماحول رہا اور ھر جگہ مجالس و ماتم بر پا ہوا-امام زین العابدین علیہ السلام کی شہادت کی مناسبت سے  شہر لکھنؤ میں مجالس و ماتم کا سلسلہ رہا ۔۲۵  محرم شہادت امام زین العابدین علیہ السلام کی مناسبت سے شیعہ کالج میں یاد بیمار کربلا کے عنوان سے مجلس کا انعقاد کیا گیا۔ شیعہ کالج  کے مولانا طاہر جرولی ہال میں منعقدہ مجلس کا آغاز تلاوت کلام پاک سے ہوا  اس کے بعد منظوم نذرانۂ عقیدت پیش کرنے والوں میں جناب حسن محسن زیدی،غلام حسنین،شباب نقوی،احسن سعید عابدی،اقبال مرزا اور سعید حسین تھے۔  مجلس کو مولانا عابس کاظم جرولی نے خطاب کیامجلس کے

 بعد جلوس عزاء  کے ہمراہ طلاب کا ماتمی دستہ نوحہ و ماتم کرتا ہوا کربلا نصیر الدین حیدر تک گیا اور یہاں اختتام جلوس پر مجلس عزا کو مولانا عابس کاظم نے خطاب کیا۔ عزاخانۂ ڈاکٹر مظہر حسین ، غازی منڈی میں منعقد مجلس کو خطاب کرتے ہوئے مولانا سید محمد جابر باقری جوراسی نے کہا : عزاداری ایک تحریک ہے صحیح دین اسلام کو روشناس کرانے کی،اس تحریک کو آگے بڑھانے کے لئے مراسم عزاء  اس کا ذریعہ ہیں۔ مولانا جابرجوراسی نے کہا : ظلم کے خلاف صدائے احتجاج یہ ہے کہ غم امام حسین علیہ السلام منائیں امام باڑہ غفران مآب میں انجمن حیدری ہلّور کے زیر اہتمام یوم بیمار کربلا کا انعقاد کیا گیا۔ جس میں تلاوت کلام پاک سے سجاد ہلوری نے آغاز کیا۔ مجلس کو خطاب کرتے ہوئے مولانا مشاہد عالم نے کہا : امام زین العابدین علیہ السلام  نے واقعہ کربلا کے بعد دنیا والوں کو اپنے کردار و عمل کے ذریعہ ظلم کے خلاف آواز آٹھاتے ہوئے یہ بتایا کہ پرہول ماحول میں عبادت خدا سے غافل نہیں ہونا چاہئے اور اللہ کی رحمت سے مایوس نہیں ہونا ہئے۔ مولانا نے کربلا سے لے کر شام تک کے سفر میں امام زین العابدین علیہ السلام  کے مصائب و مصیبت کو بیان کیا جس کو سن کر حاضرین نے گریہ ٔ و زاری کیا۔ اختتام مجلس پر ہلّور کی انجمن حیدری نے نوحہ و ماتم کیا۔عزاخانہ بوٹا نواب میں بہ سلسلہ شہادت امام زین العابدین علیہ السلام منعقد مجلس کو کلکتہ سے تشریف لائے ہوئے مولانا اطہر عباس نے خطاب کیا۔ امیر محل رسی بٹان مولوی گنج  میں شب میں منعقد مجلس کو مولانا سیف عباس نے خطاب کیامجلس ک بعد علم و شبیہ تابوت برآمدہوا۔  امام زین العابدین چیریٹبل اسپتال سلطان بہادر روڈ میں ایک مجلس عزاء برپہ ہوئی جس میں اولاََ شعرائے کرام نے منظوم نذرانہ عقیدت پیش کیا۔خورشید رضا فتح پوری نے خدائے سخن میر انیس کا معر کة الآرا مرثیہ پیش کیا۔روضۂ حضرت مسلم یس منزل میں جناب طیب کاظمی کا بیان ہوا ۔ گولہ گنج واقع امام باڑہ حیدری میں یوم زین العابدین کا انعقاد ہوا۔ہادی رضا نے سوز خوانی اور مولانا سید محمد اصغر زیدی نے مجلس کو خطاب کیا۔بعد مجلس شبیہ تابوت،علم و ذولجناح کی زیارت کرائی سجاد باغ کالونی میں شہادت امام زین العابدین علیہ السلام کی مناسبت سے مجلس و ماتم کا سلسلہ تمام شب جاری رہا

 

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close