سعودی عرب

اہل تشیع کے خلاف سعودی اقدامات ریاستی دہشت گردی کا پیش خیمہ


shiite_humanrightwatch سعودی عرب میں انسان حقوق کمیٹی کے عہدیدار شیخ محمد الحسین نے انسانی حقوق کی تنظیموں کو خط بھیج کر مطالبہ کیا ہے کہ اہل تشیع کے حقوق کا احترام کرنے کےلئے سعودی حکومت پر دباؤ ڈالا جائے ۔شیخ محمد الحسین نے انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں منجملہ امنسٹی انٹرنیشنل سے مطالبہ کیا ہے کہ شیعہ مسلمانوں ان کے علماء دین اور مراجع کرام اور دینی شعائر کے خلاف سعودی حکومتی اداروں کے اقدامات کی مذمت کی جائے اور ان اقدامات کو مذہبی فتنہ انگیزی قرار دیا جائے ۔

شیخ محمد الحسین نے سعودی اداروں کے ان اقدامات کو ریاستی دہشت گردی کا  پیش خیمہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ سعودی حکومت نے کلبانی اور العریفی جیسے افراد کے توہین آمیز اقدامات پر کوئی رد عمل ظاہر نہیں کیا بلکہ حکومت سے وابستہ ایک مذہبی ادارے نے ان کی حمایت ہی کی ہے ۔ انہوں نے احساء کے گورنر کی دھمکی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ عالمی تنظیموں کوجو انسانی حقوق کا دفاع کرتی ہیں اپنی ذمہ داریاں نبھانی چاہیں۔

یاد رہے احساء کے گورنر بن جلوی نے دھمکی دی ہے کہ جو شیعہ مسلمان اپنے بچوں کی جیلوں سے رہائی کا مطالبہ کررہے ہیں ان کو بھی جیل میں ڈال دیا جائے گا۔شیخ محمد الحسین نے کہا ہے کہ عالمی تنظیموں کو چاہئے کہ وہ سعودی حکومت پر دباؤ بڑھائیں تا کہ وہ شیعہ مسلمانوں کے خلاف توہین آمیز اور سختگیر اقدامات بندکردے

 

Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close