سعودی عرب

سعودی حكومت كو دين اور مذہب كے متعدد ہونے كو تسليم كرنا چاہیے

saudi_arabia_flag_map-300x254سعودی عرب كے صوبہ “قطيف” كے شہر “العوامیہ” كے امام جمعہ حجۃ الاسلام والمسلمين “عباس سعيد” نے سعودی حكومت سے مطالبہ كيا ہے كہ وہ معاشرے میں دين اور مذہب كے متعدد ہونے كو تسليم كرے۔

شیعت نیوز کی رپورٹ کے عباس السعيد نے كہا ہے كہ دين اور مذہب كے

 متعدد ہونے كو قبول كرنے اور تمام اسلامی مذاہب كے پيروكاروں كے لئے دينی اور عبادی اعمال كی انجام دہی كے لئے مواقع فراہم كرنے سے سعودی معاشرے كا موجودہ بحران ختم ہو سكتا ہے۔

 

انہوں نے مزيد كہا كہ دين اور مذہب كے متعدد ہونے اور مختلف مذاہب كے پيروكاروں كے حقوق كو تسليم نہ كرنے سے مذہبی تبليغ میں مشكلات پيدا ہوں گی۔

عباس السعيد نے سعودی عرب كے شہر “الخبر” كی بعض معروف شيعہ شخصيات كی گرفتاری اور شيعوں كی مساجد اور امام بارگاہوں كو بند كرنے كی طرف اشارہ كرتے ہوئے كہا كہ الخبر شہر كے شيعوں كے خلاف پابندياں لگانے سے تقريب مذاہب اسلامی كے سلسلے كو نقصان پہنچے گا۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close