لبنان

لیبیا امام موسی صدر کے بارے میں وضاحت کرے، ہیومین رائٹس واچ

 

shiite_news_musa_sadr-219x300
ہیومین رائٹس واچ لیبیا میں منعقد ہونے والے عرب لیگ کے بائیسویں اجلاس کے حوالے سے لیبیا کے حکمرانوں سے مطالبہ کیا ہے کہ معروف شیعہ راہنما امام موسی صدر سمیت اس ملک میں لاپتہ ہونے والے تمام افراد کے بارں میں وضاحت کریں۔
دریں اثناء لبنانی صدر “میشل سلیمان” بھی لیبیا کے اجلاس میں شرکت نہیں کررہے ہیں کیونکہ لیبیا کے صدر پر امام موسی صدر کے اغوا  کے الزامات ہیں۔ لیبیا میں منعقدہ اجلاس میں لبنانی وفد عرب لبنان میں لبنانی سفیر کی سربراہی میں شرکت کررہا ہے۔
واضح رہے کہ “سید موسی صدر” ـ جو عالم تشیع میں امام موسی صدر کے نام سے مشہور ہیں ـ دینی مرجع ہیں جنہوں نے ایران سے ہجرت کے بعد لبنان میں “اعلی شیعہ مجلس” کی بنیاد رکھی اور اہل تشیع کی فکری اور سیاسی قیادت سنبھالی۔ وہ 31 اگست 1978 کو لیبیا کے صدر معمر قذافی کی دعوت پر لیبیا کے دورے پر گئے جہاں سے وہ واپس نہ آئے اور لاپتہ ہوگئے۔
لیبیا کے صدر معمر قذافی نے آج تک امام موسی صدر کے بارے میں اطمینان بخش وضاحت نہیں کی ہے۔

 

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close