مقبوضہ فلسطین

مصر کی خصوصی عدالت کا فیصلہ غیر منصفانہ , ایمنسٹی انٹرنیشنل

shiite_amnesty-182x300ایمنسٹی انٹرنیشنل نے مصرمیں ان چھبیس افراد کے خلاف عدالت کے فیصلے کو غیر منصفانہ قراردیاہے جو غزہ کے محصور عوام کو آذوقہ پہنچارہےتھے۔ ایمنسٹی انٹرنیشنل نے ایک بیان جاری کرکے کہا ہے کہ مصرکی خصوصی عدالت کے بجائے ان افراد پرعام عدالت میں انصاف کے تقاضوں کے مطابق مقدمہ چلایا جانا چاہیے تھا۔ ایمنسٹی انٹرنیشنل نے کہا ہے خصوصی عدالت میں مقدمہ چلانے سے عدل و انصاف کا خون ہوجاتاہے اور قوانین کی ساکھ بگڑجاتی ہے اور انسانی حقوق کی پامالی ہوتی ہے ۔ یادرہے مصر کی ایک خصوصی عدالت نے چھبیس افراد کے ایک گروہ کو جسے حزب اللہ گروہ سے موسوم کیا گياہے غزہ کے محصورعوام کو غذائي امداد پہنچانے کے الزام میں عمر قید کی سزادی ہے۔ امنسٹی انٹرنیشنل نے خصوصی عدالت کے اس فیصلے کو مسترد کرتےہوئے کہا ہے کہ یہ فیصلہ شدید ایذائيں پہنچاکر لئےجانےوالے اعترافات پرمبنی ہے ۔ انسانی حقوق کی اس  تنظیم کے مطابق ملزمین کووکیلوں کی خدمات لینے کی اجازت بھی نہیں دی گئي تھی۔ یادرہے مصر کے قانوں کے مطابق خصوصی عدالتوں کے فیصلوں پرنظرثانی نہيں کی جاسکتی اورنہ انہیں کالعدم قراردیاجاسکتاہے ۔ قابل ذکرہےفلسطینی تنظیموں نے بھی مصر کی خصوصی عدالت کے فیصلے پرشدید احتجاج کیا ہے اور اس پرنظرثانی کرنے کی درخواست کی ہے۔ایمنسٹی انٹرنیشنل نے کہا ہےکہ یہ مقدمہ دوبارہ چلایا جائے

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close