پاکستان

حکومت جو کہتی ہے اس پر عمل کرے سیکرٹری ایم ڈبلیوایم اسلام آباد کی وزیر داخلہ سے گفتگو

rehman.alviوزیر داخلہ رحمان ملک کی جانب سے آج شام گئے مختلف مسالک کے علمائے کرام کو ایک بریفنگ کے لئے دعوت دی گئی جس میں مجلس وحدت کی جانب سے دارالحکومت اسلام آباد کے سیکرٹری جنرل مولانا فخر عباس علوی نے شرکت کی اس ملاقات میں وزیر داخلہ سے گفتگو کرتے ہوئے دارالحکومت کے سیکرٹری جنرل نے کہا کہ ملت تشیع میں اس وقت سخت قسم کی بے چینی پائی جاتی ہے اور عدم تحفظ کا احساس بڑھتا جارہا ہے اس وقت بروقت عملی اقدام کیا جانا چاہیے ،وزیرداخلہ نے جوابا کہا کہ ہم تمام ضروری اقدامات کرنا چاہتے ہیں گلگت بلتستان سڑک کو ہر حال میں محفوظ بنایا جائے گا
وزیرداخلہ نے اپنی پریس کانفرنس میں کہا کہ سانحہ بابوسر ٹاپ اور کوئٹہ سمیت دہشت گردی میں بیرونی ہاتھ ملوث ہے جس پر سیکرٹری جنرل اسلام آباد مولانا فخر علوی نے کہا کہ آپ ان کو بے نقاب کیوں نہیں کرتے جس کے جواب میں وزیرداخلہ رحمان ملک نے کہا کہ آپ مجھے کچھ وقت دیں میں جلد ہی انہیں بے نقاب کرونگاواضح رہے کہ اس سے قبل سانحہ کوہستان اور چلاس میں بھی بالکل اسی قسم کے دعوئے کئے گئے تھے جن میں سے کسی پر بھی عملی قدم نہیں اٹھایا گیا ابھی یہ خبریں بھی آرہی ہیں کہ سی ون تھرٹی پروازوں دو پرواز کے بعد منسوخ کیا گیاہے
اسکے علاوہ وزیر داخلہ نے اپنی بریفینگ میں کہا کہ سانحہ بابوسر کوئی شیعہ سنی مسئلہ نہیں بلکہ یہ صرف دہشت گردی ہے ،ہم نے گلگت بلتستان شاہراہ قرارم کو محفوظ بنانے کا تہیہ کرلیاہے آئندہ مسافر گاڑیوں کے ساتھ اسکاٹ دینگے ،وزیر داخلہ نے ایک بین المذاہب کونسل بنانے کی بھی بات کی

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close