پاکستان

دفاع تشیع مہم۔۔۔سندھ بھر میں احتجاجی مظاہرے

MWM_Protest_in_Karachiکراچی میںکالعدم دہشتگرد گروہوں سپاہ صحابہ اور لشکر جھنگوی کے ناصبی دہشت گردوں کے ہاتھوں ملت جعفریہ کی مسلسل ٹارگٹ کلنگ اور نسل کشی کے خلاف مجلس وحدت مسلمین پاکستان کی ”دفاع تشیع مہم ”کے تحت آج بعد نماز جمعہ سندھ بھر میں احتجاجی مظاہرے کئے گئے۔
شیعت نیوز کے نمائندے کی رپورٹ کے مطابق سندھ بھر میں ،سکھر،لاڑکانہ،شکارپور،دادو،سہیون،حیدر آباد،نواب شاہ ،خیر پوراور کراچی سمیت  کئی چھوٹے بڑے مقامات پر کراچی میں جاری ملت جعفریہ کی مسلسل ٹارگٹ کلنگ کے خلاف شدید احتجاجی مظاہرے کئے گئے ،مظاہرے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کی اپیل اور دفاع تشیع مہم کے آغاز پر کئے گئے ۔
سندھ بھر کی طرح کراچی میں بھی مجلس وحدت مسلمین پاکستان کی دفاع تشیع مہم کے سلسلہ میں جامعہ مسجد نور ایمان ناظم آباد ،جامعہ مسجد حسینی سفارتخانہ ملیر اور جامعہ مسجد مصطفیٰ عباس ٹاؤن میں ملت جعفریہ کی مسلسل ٹارگٹ کلنگ اور نسل کشی کے خلاف احتجاجی مظاہرے کئے گئے،مظاہروں میں مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے صوبائی رہنماؤں علی اوسط،سلمان حسینی اور علی انور نے خطاب کیا۔
مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ گذشتہ آٹھ ماہ سے کراچی شہر میں کالعدم دہشت گرد گروپوں سپاہ صحابہ ا ور لشکر جھنگوی کے ناصبی دہشتگردوں نے ملت جعفریہ کو دہشتگردی کا نشانہ بنا رکھا ہے جس کے سبب سانحہ عاشور ا اور سانحہ اربعین امام حسین علیہ السلام کے بعد اب تک سینکڑوں شیعہ بے گناہ افراد کالعدم دہشت گرد تنظیم سپاہ صحابہ کے یزیدی غنڈوں کی دہشت گردی کا شکار ہو چکے ہیں جبکہ حکومت میں موجود حکومتی شخصیات بھی اس حوالے سے کالعدم دہشت گرد گروپوں کی سر پر ستی میں ملوث ہیں،رہنماؤں کا کہنا تھا کہ ملت جعفریہ کو ہر گز ہر گز دیوار سے لگانے نہیں دیا جائے گا اور دفاع، ملت جعفریہ کا قانونی ا ور شرعی حق ہے۔
مجلس وحدت مسلمین پاکستان صوبہ سندھ کے رہنماؤں نے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کراچی میںایسا محسوس ہوتا ہے کہ کالعدم دہشت گرد گروہ سپاہ صحابہ کے یزیدی اور ناصبی درندوں کی حکمرانی قائم ہو گئی ہے جس کے سبب یہ دہشت گرد آئے دن نہ صرف ملت جعفریہ کو دہشتگردی کا نشانہ بنا رہے ہیں بلکہ اہلسنت برادری کو بھی دہشت گردی کا نشانہ بنا رہے ہیں،جو اس بات کا واضح ثبوت ہے کہ کالعدم دہشت گرد گروپوںکے ناصبی دہشتگرد اپنے غیر ملکی آقاؤں کی ایماء پر ملک بھر میں فرقہ وارانہ فسادات کی سازش میں مصروف ہیں جس کو ملت جعفریہ کسی بھی صورت میں کامیاب نہیں ہونے دے گی۔
مجلس وحدت مسلمین پاکستان نے ملت جعفریہ کے دفاع کے لئے دفاع تشیع مہم کا آغاز کر دیا ہے جس کے دوسرے مرحلے میں اتوار کے روز عظیم الشان احتجاجی ریلی نمائش سے نکالی جائے گی ،اور اگر حکومت نے پھر بھی ملت جعفریہ کی ٹارگٹ کلنگ کو رکوانے اور کالعدم دہشت گرد گروہوں سپاہ صحابہ اور لشکر جھنگوی کے ناصبی دہشت گردوں کے خلاف کاروائی نہ کہ تو ملک بھر میں شدید احتجاج کا سلسلہ شروع کر دیا جائے گا ور پھر چاروں صوبائی اسمبلیوں سمیت پارلیمنٹ کا گھراؤ بھی کیا جائے گا،اور یہ احتجاج اس وقت ہی ختم ہو گا جب حکومت کالعدم دہشت گرد گروہوں سپاہ صحابہ اور لشکر جھنگوی کے ناصبی دہشت گردوں کا ملک سے قلع قمع نہیں کر دیتی۔
اس موقع پر مظاہرین نے لبیک یاحسین (ع)،مردہ بار امریکا،اسرائیل نامنظور،دہشت گردی نامنظور اور فرقہ واریت مردہ باد کے نعرے لگائے جبکہ شہادت سعادت اور شہید کی جو موت ہے وہ قوم کی حیات ہے کہ بھی فلک شگاف نعرے لگائے۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close