پاکستان

قائدین ملت ہمارے خاندان کو بے بنیاد مقدمات کی دلدل سے نکالنے میں مدد کریں، ہمشیرہ قیصر عباس

hamsera qaisarسرگودھا کی انسداد دہشتگردی عدالت سے سزائے موت پانے والے قیصر عباس کی ہمشیرہ نے کہا ہے کہ قائدین ملت ہمارے خاندان کو بے بنیاد مقدمات کی دلدل سے نکالنے میں مدد کریں، ان خیالات کا اظہار انہوں نے ’’اسلام ٹائمز‘‘ کیساتھ بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے خاندان کو ہی کیوں نشانہ بنایا جارہا ہے۔؟ میرے بھائی بے گناہ ہیں، ہمیں انصاف ملنا چاہئے۔ انہوں نے بتایا کہ اس سے قبل میرے بھائی اختر عباس کو فضل حق قتل کیس میں ملوث کیا گیا۔ پھر میرے اسی بھائی کیخلاف 11 ایف آئی آرز درج کی گئیں۔ جو ہمارے اوپر بہت بڑا ظلم ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ جس قتل کیس میں میرے بھائی کو سزائے موت سنائی گئی ہے اس میں صرف ایک شخص کا قتل ہوا، جبکہ دوسرا زخمی ہے۔ جب ایک شخص قتل ہوا ہے تو سزائے موت 2 افراد کو کیسے دی جاسکتی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ جب سنوکر کلب واقہ کا مقدمہ سرگودھا کی انسداد دہشتگردی کی عدالت میں چلتا رہا تو کسی بھی موقع پر قیصر عباس کا نام سامنے نہیں آیا۔ انہوں نے کہا کہ میں ملت کے قائدین سے اپیل کرتی ہوں کہ ہمارے خاندان کی قانونی معاملات میں امداد کی جائے اور ہمارے خاندان کو مقدمات کی اس دلدل سے نکالا جائے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close