پاکستان

پروفیسرڈاکٹر شکیل اوج کا قتل علم دوست معاشرے کا قتل ہے، علامہ راجہ ناصر عباس جعفری

مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے جامعہ کراچی کے استاد، اسلامک اسٹڈیز فیکلٹی کے ڈین پروفیسر ڈاکٹر شکیل اوج کی شہادت کے واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ڈاکٹر شکیل کا قتل علم دوست معاشرے کا قتل ہے، دہشت گرد ملک و قوم کو جہالت کے اندھیروں میں دھکیلنا چاہتے ہیں ، کراچی میں آرٹیکل 245 کا نفاذ کرتے ہوئے وزیرستان طرز کا فوجی آپریشن کیا جائے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے وحدت میڈیا سیل سے جاری ایک مذمتی بیان میں کیا۔ علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کا کہنا تھا کہ یہ کیسا آپریشن ہے کہ جس میں دہشت گرد آزادانہ طور پر اپنی کارروائیاں کررہے ہیں، سندھ حکومت محض زبانی جمع خرچ کرنے کے بجائے عمل اقدامات پر توجہ کرتے ہوئے ڈاکٹر شکیل اوج کے قاتلوں کو گرفتار کرکے سرعام پھانسی دے۔ اساتذہ کا قتل کرنے والے کسی بھی صورت وطن دوست نہیں ہوسکتے، ڈاکٹر شکیل اوج جیسی علم دوست شخصیت کا قتل معاشرے کو جہالت کے اندھیروں میں دھکیلنے کی سازش ہیں، اس سازش کے ذریعے دہشت گرد چاہتے ہیں لوگ دہشت گردی کیخلاف آواز بلند کرنا چھوڑ دیں لیکن دہشت گردوں کا خواب چکنا چور ہوچکا ہے، ڈاکٹر شکیل اوج کی شہادت معاشرے کو مزید علم دوستی کی جانب راغب کرنے کا باعث بنے گی۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close