ایران

امریکہ اور یورپ، دہشتگردی کے مسئلہ کے حل کی توانائی نہیں رکھتے۔

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ امریکہ اور یورپ، اپنی ماضی کی پالیسیوں کو دھرانے کے ساتھ دہشتگردی کے مسئلہ کے حل کی توانائی نہیں رکھتے۔

ایران وزارت خارجہ کے پریس دفتر کی رپورٹ کےمطابق وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے نیویارک میں اسپین کے وزیر خارجہ خوزہ مانوئل کارسیا مارگالو کے ساتھ ملاقات میں علاقے میں رونما ہونے والی تبدیلیوں کا ذکر کرتے ہوئے، شام اور عراق میں سرگرم دہشتگرد گروہوں اور دہشتگردی کے حوالے سے امریکہ کے دہرے رویّہ اور پالیسیوں پر شدید تنقید کی اور کہا کہ شام میں دہشتگردوں کے خلاف مہم اور اس ملک کی مرکزی حکومت کو کمزور کرنے کے لئے اقدامات ایک ساتھ انجام نہیں دیئے جاسکتے۔
ایران کے وزیر خارجہ نے مزید کہا کہ امریکہ نے عراق میں داعش کی چار مہینے سے جاری وحشیانہ کارروائیوں کے خلاف کوئی موثر اقدام نہیں کیا، حتی دہشتگردوں کے لئے بالواستہ اوربلاواستہ مدد وحمایت بھی بندنہیں کی۔
اسپین کے وزیر خارجہ نے بھی اس ملاقات میں مشترکہ علاقائی تشویشوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ میڈریڈ، شام اور عراق میں جاری مشکلات کے حل کے لئے مناسب راہ حل پیدا کرنے میں ایران اور علاقے کے ملکوں کے ساتھ سیاسی صلاح مشوروں کے لئے مکمل آمادگی رکھتا ہے اور اس حوالے سے مدد کے لئے تیار ہے۔
اس ملاقات میں وزیر خارجہ محمد جواد ظریف کو اسپین کے دورے دی اور کہا کہ اس دورے سے دونوں کے تعلقات میں مزید توسیع آئے گی۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close