مشرق وسطی

شام ميں داعش کے ٹھکانوں پر امريکا کے حملے

رپورٹ کے مطابق امريکي وزارت جنگ پينٹا گون نےشام ميں داعش کے ٹھکانوں پر مسلسل ہوائي حملے کئے جانے کي خبر دي ہے

امريکي فوج نے دعوي کيا ہے اس فضائي کاروائي ميں رقہ کے قريب دو مقامات پردس بار بمباري کي گئي امريکي صدر باراک اوباما نے اپنے بيان ميں کہا ہے کہ يہ ابتدائي نوعيت کے حملے ہيں جو آئندہ بھي جاري رہيں گے-
واشنگٹن نے اقوام متحدہ کے نام اپنے ايک مراسلے ميں دعوي کيا ہے کہ چونکہ شام کي مرکزي حکومت داعش کا مقابلہ کرنے کي صلاحيت نہيں رکھتي اس لئے امريکہ کو خود مجبورا اقدام کرنا پڑا ہے-
عالمي قوانين کے تحت امريکہ کا يہ اقدام شام کي مرکزي حکومت کي درخواست پر يا سلامتي کونسل کي باضابطہ اجازت سے انجام پانا چاہيے –
امريکہ نے کہا ہے کہ ان حملوں کي شام سے اجازت نہيں لي گئ ہے تاہم دمشق کو ان حملوں کي پيشگي اطلاع ديدي گئ ہے-
سلامتي کونسل نے شام ميں داعش کے ٹھکانوں پر حملوں کے لئے اب تک کسي قسم کي کوئي قرارداد پاس نہيں کي ہے-
اسلامي جمہوريہ ايران اور روس سميت دنيا کے مختلف ملکوں نے شام ميں امريکا کے ہوائي حملوں کي مخالفت کي ہے –

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close