دنیا

امریکا داعش کیخلاف کارروائی پر ایک ارب ڈالر خرچ کرچکا، میڈیا رپورٹ

واشنگٹن: میڈیا رپورٹس کے مطابق امریکا داعش کے خلاف کارروائی پراب تک ایک ارب ڈالر خرچ کرچکا ہے جب کہ داعش کے ٹھکانوں پر 200 سے زائد فضائی حملے کئے جا چکے ہیں۔

اقوام متحدہ نے داعش سے متعلق رپورٹ جاری کی ہے جس میں عراق اور شام میں برسرپیکارسخت گیرجنگجو گروپ دولت اسلامی پرالزام لگایا ہے کہ اس نے لوگوں کوبڑے پیمانے پرہلاک کیا ہے جب کہ اس کے جنگجوؤں نے عورتوں اور لڑکیوں کو غلام بنا رکھا ہے اور بچوں کو لڑائی کے لئے جبری بھرتی کیا ہے۔
میڈیا رپورٹ کے مطابق امریکی طیاروں نے داعش کی سرگرمیوں پر نظر رکھنے کیلیے16جون سے جاسوس پروازیں شروع کیں جس پر روزانہ 75 لاکھ ڈالر صرف ہوئے،8 اگست کوفضائی حملے شروع ہونے سے یومیہ اخراجات ایک کروڑ ڈالرہوگئے، اخراجات میں اضافے کی وجہ مہنگے بارودکااستعمال ہے،47 ٹوماہاک میزائل بھی داغے گئے ایسے ایک میزائل کی قیمت 10 لاکھ ڈالر سے زائد ہے۔ دریں اثنااقوام متحدہ کی رپورٹ 500 انٹرویوز پرمبنی ہے جس میں بتایا گیا کہ 2014 میں اب تک عراق میں تشددکے واقعات میں9347 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ 17386 زخمی ہوئے ہیں۔
عراق کیلیے اقوام متحدہ کے معاون مشن اوراقوام متحدہ کے پناہ گزینوں کیلیے ہائی کمشنر کے دفتر نے مشترکہ طور پر یہ رپورٹ تیارکی ہے جس میں کہا گیا کہ داعش کے جنگجوؤں نے بڑے منظم انداز میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کا ارتکاب کیا ہے۔جنگجوؤں نے صوبے صلاح الدین میں ڈیڑھ ہزارفوجیوں کو 12 جون کو عدالت لگا کرسزائے موت سنا دی تھی اورانھیں بعد میں سروں میں گولیاں مارکر بے دردی سے قتل کردیا گیا تھا۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close