پاکستان

دنیا بھر کی طرح پاکستان بھر میں شہدائے کربلا کی یاد میں یوم عاشورا پر عزاداری کے بھرپور اجتماعات

دنیا بھر کی طرح پاکستان بھر میں بھی دس محرم الحرام یوم عاشورا کو شہدائے کربلا اورپیغمبر اکرم حضرت محمد (ص) کے نواسے حضرت امام حسین علیہ السلام اور آپ (ع) کے با وفا ساتھیوں کی یا دکو انتہائی مذہبی عقیدت اور جوش سے منایا گیا۔ شیعت نیوز کے نمائندوں کی موصولہ رپورٹس کے مطابق ملک بھر کے گوش و کنار اور چھوٹے بڑے تمام شہروں قصبوں اور دیہاتوں میں ابا عبد اللہ الحسین علیہ السلام کی عزاداری کے اجتماعات منعقد ہوئی ، اس عنوان سے مساجد اور امام بارگاہوں میں مجالس عزاء منعقد ہوئیں جس کے بعد عاشورائے حسینی کی یاد میں جلوس عزاء نکالے گئے جہاں عزاداران امام حسین علیہ السلام نے نو حہ خوانی ، سینہ زنی سمیت مخصوص انداز میں نواسہ رسول(ص) حضرت امام حسین علیہ السلام اور آپ کے ساتھیوں کی شہادت پر پرسہ پیش کیا۔
ملک بھر میں عاشورائے حسینی کی یا دمیں نکالے جانے والے عزاداری کے جلوسوں میں ملک بھر کے کروڑوں عزاداران امام حسین علیہ السلام شریک تھے جن میں معصوم بچوں سے لے کرنوجوانوں تک اور اسی طرح ادھیڑ عمر کے بزرگ مرد و خواتین شامل تھے، شرکائے جلوس ہائے عزاء نے ہاتھوں میں علم حضرت عباس بلند کر رکھے تھے جس اس با ت کی عکاسی کر رہے تھے کہ حضرت امام حسین علیہ السلام کے بھائی جناب حضرت عباس علیہ السلام کی وفا کا تسلسل تا قیامت جاری ہے اور ان کی عظیم و بے مثل قربانی کو فراموش نہیں ہونے دیا جائے گا، اسی طرح جلوس ہائے عزاء میں ابا عبداللہ الحسین علیہ السلام کی مخصوص سواری جسے ذوالجناح کہتے ہیں اور کربلا کے میدان میں ذوالجناح نے آخری وقت تک امام حسین علیہ السلام کا بھرپور ساتھ دیا حتیٰ کے اپنے جسم پر ہزاروں تیر بھی برداشت کئے، تاہم اس مناسبت سے جلوس ہائے عزاداری میں ذوالجناح کی شبہیہ بھی موجود ہونے کے ساتھ جھولا حضرت علی اصغر علیہ السلام کی شبہی مبارک بھی موجود تھیں۔
واضح رہے کہ محرم کی دسویں تاریخ یعنی یوم عاشورا پر پاکستان بھر کے تمام چھوٹے بڑے شہروں ، قصبوں اور دیہاتوں میں بشمول اسلام آباد، کراچی، لاہور، راولپنڈی، پشاور، کوہاٹ، ہنگو، پاراچنار، گلگت ، بلتستان، آزاد کشمیر، مظفر آباد، پونچھ،راولا کوٹ،گوجرانوالہ، سیالکوٹ، سرگودھا، لالہ موسیٰ، جہلم، واہ کینٹ، فیصل آباد، جھنگ، ملتان، ڈیرہ اسماعیل خان، ڈیرہ غازی خان، ساہیوال، بہاولپور، بہاولنگر، رحیم یار خان، خان پور، لیاقت پور، احمد پور شرقیہ، لودھراں، کہروڑ پکا، وکوٹ ادو، میانوالی،راجن پور،ہاڑی، ٹوبہ ٹیک سنگھ، بھلوال، حافظ آباد،نارووال، مری، بھوانہ، لیہ ، شور کوٹ، خانیوال ، چنیوٹ،میلسی، گھوٹکی، شکار پور، لاڑکانہ، پنو عاقل، سکھر، روہڑی، نوشہروفیروز، جیکب آباد، نصیر آباد، سبی، کوئٹہ، ڈیرہ مراد جمالی، ڈیرہ بگٹی، حیدر آباد، جامشورو، نواب شاہ،دادو، سہیون، خیر پور میرس، کوٹ ڈی جی، رانی پور، کشمور، میر پور خاص، سانگھڑ، ٹھٹہ ، بدین، ٹندو محمد خان، ٹنڈو الہ یار، بھٹ شاہ، تھرپارکر، مٹھی، سمیت چکوال اٹک، ٹیکسلا اور متعدد دیگر مقامات پر عزاداری کے اجتماعات منعقد ہوئے ۔
واضح رہے کہ ملک بھر میں یوم عاشورا پر نکالے جانے والے جلوس ہائے عزاء اور مجالس عزاء پر امن طور پر اپنے اپنے مقامات پر پہنچ کر اختتام پذیر ہوئے جبکہ چند ایک مقامات پر ناصبی تکفیری دہشت گردوں کی جانب سے رکاوٹیں ڈالنے اور جلوس ہائے عزاء پر حملوں کی کوششیں کی گئیں۔
ملک بھر میں عاشورائے حسینی پر نکالے جانے والے جلوس ہائے عزاء کی قیادت علمائے کرام، ذاکرین عظام اور خطباء نے کی، تمام شہروں میں بالخصوص کراچی میں جلوس عزاء کے راستوں میں نماز ظہرین کا خصوصی انتظام کیا گیا جہاں عزاداران امام حسین علیہ السلام نے ظہر اور عصر کی نمازیں ادا کیں اور پھر نما زکے بعد جلوس عزاء میں شامل ہو گئے۔
یو م عاشورا کی اہمیت کی مناسبت دورسی جانب ٹی وی چینلز، اخبارات اور دیگر ذرائع ابلاغ میں خصوصی نشریات بھی جار ی رہیں جس سے یوم عاشورا کی اہمیت کا مزید اندازہ لگایا جا سکتا ہے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close