پاکستان

فخر ملت جعفریہ قائد اعظم محمد علی جناح ؒ کو یوم ولادت قومی جوش و جذبہ سے منایا جارہا ہے

شیعت نیوز: بابائے قوم قائداعظم محمد علی جناحؒ کا ۱۳۸ واں یوم ولادت آج قومی جوش و جذبے کے ساتھ منایا جا رہا ہے اور اس حوالے سے ملک بھر میں خصوصی تقاریب کا اہتمام کیا جا رہا ہے۔ قائداعظم محمد علی جناح ؒ کے یوم ولادت پر دن کا آغاز کراچی میں ۲۱ توپوں کی سلامی سے ہوا اور اس موقع پر مزار قائد پر گارڈز کی تبدیلی کی تقریب منعقد کی گئی اور فاتحہ خوانی کی گئی۔ مزار قائد کی سکیورٹی کی ذمہ داریاں پاکستان ملٹری اکیڈمی کاکول کے چاک و چوبند دستے کےحوالے کی گئیں۔ اس سے قبل مزار قائد کی سکیورٹی کی ذمہ داریاں پاک فضائیہ کے دستے کے پاس تھیں۔ تقریب کے مہمان خصوصی کمانڈیٹ پاکستان ملٹری اکیڈمی میجر جنرل ندیم رضا تھے۔ گورنز سندھ ڈاکٹر عشرت العباد خان اور سندھ کابینہ کے اراکین سمیت سماجی اور سیاسی شخصیات نے مزار قائد پر حاضری دی اور فاتحہ خوانی کی۔

بانی پاکستان کے یوم پیدائش کے موقع پر ملک بھر میں عام تعطیل ہے جب کہ سرکاری و غیر سرکاری اداروں کی جانب سے خصوصی تقریبات، سیمینارز، کانفرنسوں اور مذاکروں کا اہتمام کیا جا رہا ہے۔ پاکستان ٹیلی ویژن (پی ٹی وی) ریڈیو پاکستان اور نجی چینلز پر بانی پاکستان کی زندگی اور جدوجہد آزادی میں ان کے کردار پر خصوصی پروگرام پیش کئے جا رہے ہیں جب کہ اخبارات اور رسائل میں خصوصی مضامین شائع کیے گئے ہیں۔ لاہور سمیت دیگر شہروں میں سرکاری و غیر سرکاری سطح پر تقریبات منعقد کی جا رہی ہیں۔ وفاقی و صوبائی دارالحکومتوں میں توپوں کی سلامی دی گی۔

وزیراعظم نواز شریف نے قوم کے نام اپنے پیغام میں کہا کہ قائداعظم محمد علی جناحؒ کو خراج عقیدت پیش کرنے کا سب سے بہترین طریقہ یہی ہے کہ ہم ملک کی بے لوث خدمت اور بھرپور لگن و حب الوطنی سے کام کریں۔ سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا کہ بابائے قوم نے نے ایک جمہوری اور ترقی پسند پاکستان کا وژن دیا تھا، آج ان کے اس فلسفے پر کاربند ہونے کی جتنی ضرورت ہے اتنی پہلے کبھی نہیں تھی۔

قائداعظم محمد علی جناح ۲۵ دسمبر ۱۸۷۶ء کو وزیر مینشن کراچی میں جناح پونجا کے گھر پیدا ہوئے، آپ اپنے ۷ بہن بھائیوں میں سب سے بڑے تھے، آپ نے اپنی ابتدائی تعلیم کراچی اور ممبئی میں حاصل کی اور پھر اعلیٰ تعلیم کے لئے لندن چلے گئے جہاں سے ۱۸۹۵ء میں قانون کی ڈگری حاصل کی اور ساتھ ساتھ سیاست میں بھی گہری دلچسپی لینے لگے۔ قائداعظم محمد علی جناح نے ۱۸۹۶ء میں انڈین نیشنل کانگریس میں شمولیت اختیار کی اور پھر ۱۹۱۳ء میں آل انڈیا مسلم لیگ میں شامل ہوئے اور ۱۹۱۶ء کے لکھنئو کے اجلاس میں آل انڈیا مسلم لیگ کے صدر منتخب ہو گئے۔

محمد علی جناح نے ہندوستان کو برطانوی تسلط سے آزاد کرانے لے لئے کانگریس اور مسلم لیگ کو قریب لانے میں اہم کردار ادا کیا۔ قائداعظم محمد علی جناح نے ۱۹۲۹ء میں نہرو رپورٹ کے جواب میں مشہور زمانہ ۱۴ نکات پیش کیے جو کہ بعد میں قیام پاکستان کے لئے پیش خیمہ ثابت ہوئے۔ مسلمانوں کے لئے علیحدہ وطن کے لئے مسلسل جدو جہد کی وجہ سے آپ کی طبیعت ۱۹۴۰ء سے خراب ہونا شروع ہو گئی اور ۱۹۴۷ء میں پاکستان کو آزاد کرانے کے صرف ایک سال بعد ۱۱ ستمبر ۱۹۴۸ء کو دنیائے فانی سے کوچ کر گئے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close