سعودی عرب

جہاد النکاح کے ذریعے پھیلنے والی بیماری ایڈز میں مرنے والا شخص شہید ہے،سعودی مفتی بشایر مجمیی

سعودی عرب کے وہابی مفتی دین اسلام کو بدنا م کرنے میں کوئی لمحہ ہاتھ سے نہیں جانے دیتے، کیونکہ صہیونی و سعودی دونوں بھائی اسلام کے خلاف حالات جنگ میں ہیں، دونوں کا مقصد اسلام ناب محمدی (س) سے دیگر اقوام کو نالاں کرنا اور مسلمانوں کو اپنے تخریبی فتووں کے ذریعے دین کی روح سے دور کرنا ہے۔

زمانہ حال میں ان وہابیوں کا زنا جیسے عظیم گناہ کو جہاد کا نام دینا اسکی ایک واضع مثال ہے اب جبکہ زنا کے عام ہونے سے شام و عراق میں دہشتگرد طرح طرح کی بیمارویوں کا شکار ہوررہے ہیں تو انہوں نے ایک نیا فتویٰ داغ دیا۔ سعودی مفتی بشایر مجمیی کہتا ہے کہ جہاد النکاح کے ذریعے جنسی عمل کے دوران جن مجاہدیں کو ایڈز کی پیماری ہوئی اور اگر وہ اسے مر جائیں تو وہ شہید ہونگے۔

خدا غارت کرے ان دین فروشوں کو جو اسلام کے شعائر کا مسلسل مذاق بنارہے ہیں۔ جہاد النکاح جیسے عظیم گناہ اور اس جہاد کے نام پر ایک عورت سے کئی کئی مردوں کے جنسی تعلق نے جب کئی بیماریوں کو جنم دیا جن میں ایڈز سرفہرست ہے تو اب ان بیماریوں سےمرنے والوں کو بھی ان دشمن خدا نے شہید قرار دینا شروع کردیا ہے تاکہ اسطرح بھی جہادیوں کو جنت اور حورؤں کی لالچ دیکر بے وقوف بنایا جاسکے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close