سعودی عرب

ڈنڈے والی شریعت: سعودی عرب میں نقاب نہ پہننے پر طلبہ کو بس سے اُتار دیا

رپورٹ کے مطابق اس واقعے کی ریکارڈ کی گئی ایک وڈیو یوٹیوب پر پوسٹ کی گئی ہے، جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ مذکورہ سپروائزر نے بس ڈرائیور سے کہا کہ وہ بس کو روک دے اور طالبات کو حکم دیا کہ وہ اس طالبہ کی شناخت فراہم کریں۔

اس وڈیو کلپ کے مطابق اس شخص نے بس ڈرائیور سے کہا کہ وہ ایئرکنڈیشنر بند کردے تاکہ گرمی سے پریشان ہو کر لڑکیاں اس طالبہ کی شناخت فراہم کرنے پر مجبور ہوجائیں۔

اس سپروائزر نے دھمکی دی کہ وہ وزیرِ تعلیم عظام الدخیل کے پاس جاکر ان طالبات کی بے دخلی کے لیے کہے گا۔

ان طالبات میں سے ایک نے بتایا کہ وہ بس کے اندر ہمیشہ اپنا چہرہ کھلا رکھتی ہیں، اس لیے کہ بس کے شیشے رنگین ہیں اور انہیں باہر سے کوئی نہیں دیکھ سکتا ۔

انہوں نے کہا کہ ’’میں اور میری تین دوست بس کے اندر ہمیشہ اپنے چہرے کھلے رکھتے ہیں۔‘‘

’’اس سپروائزر نے ہم میں سے ایک کو بغیر نقاب کے دیکھا اور آگ بگولہ ہوگیا، اس کا یہ شور شرابہ یونیورسٹی کے قواعد و ضوابط کے خلاف ہے۔‘‘

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close