پاکستان

پولیس کا علامہ غلام رضا نقوی کے گھر چھاپہ، فوری گرفتاری وارنٹ جاری

کالعدم سپاہ محمد پاکستان کے سربراہ علامہ غلام رضا نقوی ایک بار پھر اپنے گھر سے پراسرار طور پر لاپتہ ہوگئے ہیں۔ پولیس ذرائع کے مطابق غلام رضا نقوی جیل سے رہائی کے بعد اپنی رہائش گاہ واقع ٹھوکر نیاز بیگ لاہور میں قیام پذیر تھے جبکہ عدالت کے خصوصی احکامات پر ان کا نام فورتھ شیڈول میں شامل کر لیا گیا تھا۔ پولیس ذرائع کے مطابق فورتھ شیڈول میں شامل افراد کے لئے لازم ہوتا ہے کہ وہ اپنی نقل و حرکت سے متعلق قریبی تھانے کو رپورٹ کرتے ہیں۔ پولیس ذرائع کے مطابق علامہ غلام رضا نقوی گذشتہ جمعہ سے تھانے میں رپورٹ نہیں کر رہے تھے، پولیس نے ٹھوکر نیاز بیگ میں ان کے اہل خانہ سے رابطہ کیا تو ان کی عدم موجودگی کا پتہ چلا،

 دوسری جانب علامہ غلام رضا نقوی کے بیٹے کا کہنا تھا کہ پولیس نے ہی ان کے والد کو گرفتار کیا ہے اور اب ان کی گرفتاری کو خفیہ رکھا جا رہا ہے۔ انہوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ پولیس انہیں مقابلے میں مار سکتی ہے۔ علامہ غلام رضا نقوی کے بیٹے نے وزیراعلٰی پنجاب میاں شہباز شریف سے مطالبہ کیا ہے کہ ان کے والد کو پولیس کی حراست سے بازیاب کرایا جائے۔

واضح رہے کہ علامہ غلام رضا نقوی بلا کسی جرم اپنی زندگی کا آدھا حصہ جیل میں گذار چکے ہیں اور ثبوت نہ ہونے کی بنیاد پر عدالت کی جانب سے انہیں رہا کردیا  گیا تھا۔ لہذا پنجاب حکومت اب تکفیری دہشتگردوں کے ساتھ بلینس پالیسی اختیار کرتے ہوئے شیعہ مسلمانوں کو بھی اپنی دشمنی کا نشانہ بنارہی ہے۔

 

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close