لبنان

لبنان کی خود مختاری و عوام کا دفاع حزب اللہ کی اولین ترجیح ہے،شیخ نعیم قسیم

حزب اللہ لبنان کے نائب سیکریٹری جنرل نے کہا ہے کہ حکومت میں حزب اللہ کی شرکت کا مقصد لبنانی عوام کے مسائل کا حل اور قوم کا صیہونی جارحیت سے دفاع کرنا ہے۔

رپورٹ کے مطابق لبنانی شہر نباتیہ میں حزب اللہ سے وابستہ کمیٹیوں کے اراکین کے ساتھ سالانہ ملاقات میں حزب اللہ کے نائب سیکریٹری جنرل ’’شیخ نعیم قاسم ‘‘ نے کہا کہ اس وقت لبنان کو سیاسی میدان اور دیگر طرح کے سنگین مسائل کا سامنا ہے اور حکومت ان مسائل کو حل کرنے میں پوری طرح ناکام رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ لبنان کے بڑھتے مسائل کو حل کرنے کے منصوبے کو محض لوگوں کے مفادات اور بدعنوان افراد کو سزا دینے کیلئے لاگو ہونا چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ اس نازک صورتحال میں حکومت کے پاس دو آپشن ہے یا حکومت پلان کو رشوت خوروں کے ساتھ لاگو کرے یا پلان کو معطل کرے۔

لبنان کے شیعہ عالم دین نے کہا کہ لبنان میں بدعنوانی کی جڑیں سیاسی نظام سے جڑی ہوئی ہیں اور اس نظام میں اصلاحات کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ حزب اللہ پر تاریخ میں کبھی بھی بدعنوانی کا داغ نہیں لگا ہے جبکہ بعض افراد حزب اللہ اور مقاومت کو بدعنوانی کے معاملات میں ملوث ہونے کا الزام عائد کررہے ہیں۔

موصوف سیکریٹری جنرل نے کہا کہ حزب اللہ نے ملک میں ہورہے واقعات میں حصہ نہ لینے کا فیصلہ کیا ہے اور ہم اپنے مقاصد کو لوگوں کے صحیح مفادات پورا کر کے حاصل کرنے کے خواہاں ہیں۔

شیخ نعیم قاسم نے مزید کہا کہ بعض اشخاص کا ماننا ہے کہ حزب اللہ لبنان کے مسائل کو حل کرسکتے ہیں ہیں لیکن حزب اللہ حکومت کے تعاون کے بغیر ایسا کبھی نہیں کرسکتی ۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close