پاکستان

سانحہ چارسدہ: مقدمہ ہلاک دہشت گردوں پر درج

پشاور: خیبر پختونخوا میں چارسدہ کی باچا خان یونیورسٹی پر دہشت گردوں کے حملے کا مقدمہ درج کر لیا گیا جبکہ زخمیوں میں سے ایک اور شخص کے دم توڑ جانے کے بعد ہلاک افراد کی تعداد میں بھی اضافہ ہو گیا.

دوسری جانب ملک کے مختلف شہروں میں سانحہ چارسدہ کے خلاف احتجاج کیا جا رہا ہے۔
باچا خان یونیورسٹی پر دہشت گردوں کے حملے کا مقدمہ محکمہ انسداد دہشت گردی مردان ریجن میں درج کیا گیا۔
مقدمہ تھانہ سرڈھیری کے ایس ایچ او کی مدعیت میں دہشت گردی کی دفعات کے تحت درج کیا گیا، جس میں 4 مارے گئے دہشت گردوں کو نامزد کیا گیا۔

fir.jpg

ایف آئی آر کے مطابق گشت کے دوران باچاخان یونیورسٹی پر دہشت گردوں کے حملے کی اطلاع ایس ایچ او کو دی گئی جس پر بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی جبکہ سیکیورٹی فورسز کو بھی طلب کیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق واقعے میں تمام دہشت گرد جن کی تعداد 4 تھی، مارے گئے جبکہ ایک پولیس اہلکار بھی دوران مقابلہ زخمی ہوا۔

ایف آئی آر میں کہا گیا ہے کہ ہلاک ہونے والے دہشت گردوں کے قبضے سے 4 کلاشنکوف، 16میگزین، 240 کارتوس بھی قبضے میں لیے گئے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز اس حملے کی ذمہ داری طالبان کے ایک گروہ طالبان گیدڑ گروپ نے قبول کرنے کا دعویٰ کیا تھا، تاہم ایف آئی آر میں اس گروپ یا اس کے لیڈر کو نامزد نہیں کیا گیا۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close