پاکستان

سانحہ صفورا کے ماسٹر مائنڈ عبداللہ کے داعش کے بارے میں اہم انکشافات

شیعیت نیوز: سی ٹی ڈی کے ہاتھوں گرفتار ہونے والے سانحہ صفورا کے ماسٹرمائنڈ عبداللہ منصوری نے کراچی میں داعش کے حوالے سے مزید انکشافات کردیئے۔ سی ٹی ڈی کے مطابق عبداللہ منصوری نے تفتیش کے دوران بتایا ہے کہ عبداللہ یوسف عرف ثاقب کا تعلق شام سے ہے۔ عبداللہ یوسف داعش کے لئے دہشتگردوں کو بھرتی کرتا ہے۔ ملزم کا کہنا ہے کہ عبداللہ یوسف نے بڑی تعداد میں دہشتگردوں کی داعش میں شمولیت اختیار کروائی، جبکہ سال 2014 اور 15 میں اس نے داعش کی وال چاکنگ کا ٹاسک دیا۔ داعش کی چاکنگ کے بعد سانحہ صفورا کا منصوبہ بنایا۔ذرائع کے مطابق سانحہ صفورا کے مرکزی ملزم طاہر سائیں اور جلال کے درمیان فنڈز پر اختلافات کے بعد داعش میں بھرتیاں شروع ہوئیں۔ سانحہ صفورا کے دہشتگرد بھی عبد اللہ یوسف کے ذریعے داعش میں بھرتی ہوئے۔ گرفتار دہشت گرد عبداللہ منصوری نے انکشاف کیا کہ داعش کا نیٹ ورک اوکاڑہ سے چلایا جاتا ہے۔ ادھر سی ٹی ڈی ذرائع کے مطابق داعش کے دہشتگردوں کا نیٹ ورک بے نقاب ہونے کے بعد اہم گرفتاریاں عمل میں آئی ہیں۔ داعش کے کچھ دہشتگردوں کو پنجاب سے گرفتار کیا جاچکا ہے۔ عبداللہ یوسف گرفتاری سے بچنے کے لیے شام فرار ہو چکا ہے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close