پاکستان

تعلیمی اداروں میں تبلیغ کے ذریعہ بارودی بنانے کی اجاز ت دی جائے، مولانا طارق جمیل

شیعیت نیوز: سرپرست طالبان و لشکر جھنگوی مولانا طارق جمیل نے وزیراعلی پنجاب میاں شہباز شریف سے ملاقات کی اور پنجاب کے تعلیمی اداروں میں تبلیغی جماعت پہ پابندی لگائے جانے کے خلاف احتجاج کیا اور مطالبہ کیا کہ فوری پابندی ھٹائی جائے۔

اطلاعات کے مطابق تبلیغی جماعت کے سرپرست اعلیٰ مولانا طارق جمیل نے پنجاب کے تعلیمی اداروں میں حکومت کی جانب سے لگائی جانے والی پابندی کے خلاف وزیر اعلیٰ پنجاب سے ملاقات کی اور ان سے مطالبہ کیا کہ پنجاب کے تعلیمی اداروں میں تبلیغی جماعت پر لگائی جانے والی پابندی کو فوریٰ اُٹھایا جائے۔

دوسری جانب وزیر اعلیٰ پنجاب نے مولانا طارق جمیل کو اس حوالے سے کوئی واضح اور مثبت جواب نہیں دیا ہے، کیونکہ حکومت کے پاس انٹیلیجنس کی رپورٹس موجود ہیں جس میں واضح ہے کہ تبلیغ جماعت کی آڑ میں دہشتگرد تعلیمی اداروں کا نقشہ بناتے تھے، جبکہ کئی شدت پسند دہشتگرد جو تعلیمیٰ اداروں سے وابسطہ رہے وہ سب تبلیغی جماعت سے متاثر ہوکر اس لائن پر آئے۔

 واضح رھے کہ دیوبندی تبلیغی جماعت پاکستان میں دہشت گردوں کے اسلحہ کی سپلائی ، اھم قومی تنصیبات تک رسائی اور دہشت گردوں کی نقل و حمل کا اھم ذریعہ ھے ۔۔ طالبان ،  جنداللہ ، سپاہ صحابہ ، لشکر جھنگوی سمیت اہم  دہشت گرد تنظیمیں یہیں سے اپنے امور ترتیب دیتی ہیں، راونڈ کا اجتماع ان سب دہشتگرد تنظیموں کی مشترکہ میٹنگ پلیس ہےجہاں سے پورے میں ہونے والے دہشتگردوں حملو ں کی اجازت سے لے کر پلانگ تک سیٹ کی جاتی ہے، لہذا ضرورت اس امر کی ہے کہ تبلیغ کانام استعمال کرکے اپنے مغموم مقاصد حاصل کرنے والے شرپسندوں کے خلاف فوری کاروائی کی جائے، اور ہرگز کسی بھی تعلیمی ادارے یا کسی سرکاری و حساس اداروں میں ان نام نہاد تبلیغی جو بعد میں بارودی بن جاتے ہیں کو اجازت نا دی جائے۔

مولانا طارق جمعیل ملک دشمن کالعدم جماعتوں کے سربراہوں کے ساتھ خوش گوار موڈ میں

B5jWMwWCAAIl_-F.jpg

B9DoLhbIQAAFp8s.jpg

 

 

 

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close