پاکستان

شکارپور:نماز عید کے شیعہ اجتماع پر حملے کی کوشیش پولیس نے ناکام بنادی

شیعیت نیوز: خانپور کی مقامی شیعہ مسجد جعفریہ میں نمازُعید الاضحی کے اجتماع کو خودکش حملے کا نشانہ بنانے کی تکفیری دیوبندی حملہ اوروں کی کوشیش مومنین اور سندھ پولیس کے جوانوں  نے ناکام بنا دی ، اس واقعہ میں دو پولیس اہلکاروں سمیت کم از کم دس افراد زخمی جبکہ دو حملہ آور ہلاک ہوگئے ہیں۔ شکار پور کی تحصیل خانپور میں چار خودکش بمباروں  نے نماز عید کے دوران حملے کی کوشش کی، لیکن پولیس کی بروقت کارروائی کی بدولت کوئی بڑا جانی نقصان نہیں ہوا۔ شکار پور میں نماز عید کے دوران دو خودکش حملہ آوروں میں سے ایک نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا، جس کے نتیجے میں دو پولیس اہلکاروں سمیت دس افراد زخمی ہوگئے۔ زخمیوں کو شکار پور کے سول ہسپتال منتقل کیا جا رہا ہے جبکہ دوسرا خودکش بمبار بم دھماکے کے نتیجے میں ہونے والی افراتفری کا فائدہ اٹھاتے ہوئے فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا۔ دوسری جانب شکار پور میں ہی پولیس نے امام بارگاہ پر حملے کا بڑا منصوبہ ناکام بنا دیا۔ عینی شاہدین کے مطابق پولیس نے امام بارگاہ میں داخل ہونے والے دو مشکوک افراد کو روکنے کی کوشش کی، تاہم انہوں نے فرار ہونے کی کوشش کی، جس پر پولیس کی فائرنگ کے نتیجے میں ایک حملہ آور موقع پر ہی ہلاک ہوگیا جبکہ دوسرے کو پولیس نے گرفتار کر لیا ہے۔

ذرائع کے مطابق پکڑے جانے والے ملزم کے اعترافات میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ ان دونوں حملہ آوروں کو عید گاہ تک رسائی دینے والے سہولتکار کا نام عمر ہے جبکہ قانون نافظ کرنے والے اداروں نے تحقیقات کا عمل تیز کر دیا ہے۔

14291694_1480349471981620_3224667535131197467_n.jpg

گرفتار حملہ آور

واضع رہے کہ شہر کی متحرک شیعہ تنظیمیں متعدد بار احتجاجات میں شکارپور اور اس کے ملحقہ علاقوں میں قائم دہشتگردوں کے نیٹورکس کے خلاف آپریشن کا مطالبہ کرتی رہی ہیں لیکن انتظامیہ کی جانب سے کوئی سنجیدہ اقدام نظر نہیں آیا۔

دیگر ذرائع کے مطابق سندھ کے شہر شکار پور کے نزدیک خانپور کی عیدگاہ میں خودکش حملہ آور نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔ ایک حملہ آور زخمی حالت میں گرفتار کر لیا گیا۔ واقعے میں تین پولیس اہلکاروں سمیت آٹھ افراد زخمی ہوئے۔ وزیراعلٰی سندھ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ دہشت گردوں کے مکمل خاتمے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے۔ خانپور کی عیدگاہ میں دہشت گردوں نے دوران نماز عیدالاضحٰی حملہ کر دیا۔ عیدگاہ میں دو دہشت گردوں نے داخل ہونے کی کوشش کی۔ اس دوران پولیس نے جب حملہ آوروں کو روکا تو ایک حملہ آور نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔ واقعے میں تین پولیس اہلکاروں سمیت آٹھ افراد زخمی ہوگئے، جنہیں شکار پور سول اسپتال منتقل کیا گیا۔ وزیراعلٰی سندھ مراد علی شاہ نے جائے وقوعہ کا دورہ کیا اور کہا کہ پولیس نے حملہ آوروں کا ڈٹ کر مقابلہ کیا۔ دہشت گردوں نے آسان ہدف جان کر خانپور کا انتخاب کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ سندھ میں امن و امان کی صورتحال ماضی سے بہتر ہے، دہشت گردوں کے مکمل خاتمے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے۔ ایک دہشت گرد کو زخمی حالت میں گرفتار کر لیا گیا۔ زخمی اہلکاروں کو سکھر منتقل کر دیا گیا ہے۔ واقعے کی مزید تفتیش جاری ہے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل بھی گذشتہ سال شکار پور میں مسجد و امام بارگاہ کربلا میں نماز جمعہ کے دوران خودکش حملہ ہوا تھا جس میں پچاس سے زائد افراد شہید ہوئے اور کئی زخمی ہوئے تھے۔

14356056_1480337188649515_1558558760_n.jpg

واصل جنہم ہونیوالا حملہ آور

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close