پاکستان

گلگت بلتستان: یوم حسینؑ پر عائد پابندی مسترد، اسکردو میں تقریب، ہزاروں طلباء کی شرکت

شیعیت نیوز: فیڈرل گورنمنٹ ڈگری کالج اسکردو میں یوم حسینؑ اجازت نہ دینے اور رکاوٹیں کھڑی کرنے کے باوجود نہایت عقیدت احترام سے منعقد کیا گیا۔ کالج اور اسکردو انتظامیہ کی سنگین دھمکیوں کو خاطر میں نہ لاتے ہوئے تعلیمی اداروں میں مذہبی تقریبات کے انعقاد پر عائد صوبائی حکومت کے فیصلے کو مسترد کر دیا۔ طلباء ڈگری کالج اسکردو نے گلگت کے طلباء کے طرز پر پرشکوہ یوم حسینؑ کا انعقاد کیا۔ تفصیلات کے مطابق ڈگری کالج اسکردو کی جانب سے منعقدہ یوم حسینؑ میں ہزاروں طلباء نے شرکت کی اور تمام مکاتب فکر کے طالب علموں نے اس تقریب سے خطاب کیا۔ یوم حسینؑ میں امام عالی مقام کی سیرت پر مقررین نے سیر حاصل گفتگو کی اور کالج کا ہال "لبیک یاحسینؑ” کے نعروں سے گونجتا رہا۔ دوسری طرف اسکردو انتظامیہ نے یوم حسینؑ کی تقریب کو روکنے لئے پولیس کی نفری بھیجی، لیکن طلباء کی مزاحمت کے سامنے انتظامیہ یوم حسینؑ کو روکنے میں کامیاب نہیں ہوئی۔ بلتستان جیسے خطے میں تعلیمی اداروں میں یوم حسینؑ کو روکنے کی کوشش انتہائی افسوسناک اور شرمناک عمل ہے۔ کالج کے طلباء کو کالج سے خارج کرنے، ان کے خلاف دہشتگردی کی دفعات لگانے اور گرفتار کرنے کی دھمکیاں بھی مسلسل آتی رہیں، لیکن طلباء نے کسی ایک کی نہیں سنی اور تقریب منعقد کی۔

یوم حسینؑ کی تقریب میں مقررین نے کہا کہ حکومت یوم حسینؑ پر پابندی عائد کرکے یہاں کے عوام کے مذہبی جذبات کو مجروح اور ان پر اپنے نظریات کو مسلط کرنے کی کوشش کر رہی ہے، جو کہ پاکستان کے نظریئے کے برخلاف ہے۔ انہوں نے کہا کہ انڈیا کی طرف سے مقبوضہ کشمیر میں بھی تعلیمی اداروں میں یوم حسینؑ پر پابندی عائد نہیں، لیکن اسلامی ریاست میں مذہبی تقریبات پر پابندی انتہائی شرمناک عمل ہے۔ ہم مذہبی تقریبات پر پابندی کو کسی صورت تسلیم نہیں کریں گے، اگر ضرورت پڑتی ہے تو یوم حسینؑ تمام مکاتب فکر کے طلباء ملکر منائیں گے اور اب کہ بار ڈی سی آفس میں منائیں گے۔ واضح رہے کہ یوم حسینؑ کی تقریب میں تمام مکاتب فکر کے طلباء نے گفتگو کرکے صوبائی حکومت کو آئینہ دکھا دیا۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close