ایران

ایرانی عوام امریکہ کو شکست دے گی حسن روحانی

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے حکومت کی اہم شخصیات اور ڈائریکٹروں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے جوہری معاہدے سے امریکہ کے نکلنے کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کو اس معاہدے سے نکلے ہوئے تقریبا 51 روز ہو گئے ہیں دنیا کے تقریبا سبھی ممالک نے امریکی صدر ٹرمپ اور دیگر امریکی حکام کی مذمت کی اور کسی نے بھی یہ نہیں کہا کہ ایران اپنے موقف سے پیچھے ہٹا ہے اور پابندیوں سے ڈر گیا ہے لیکن سب نے یہی کہا کہ ایران نے عقل و منطق سے فیصلہ کیا ہے۔

صدر حسن روحانی نے جوہری معاہدے پر تاکید کرتے ہوئے کہا کہ امریکی اور صیہونی لابی اور اسی طرح علاقے میں ایران کے بد خواہوں نے یہ سوچا تھا کہ امریکہ کی جانب سے جوہری معاہدے سے علیحدہ ہونے کے بعد ایران بھی چند گھنٹوں کے بعد اس عالمی معاہدے سے نکل جائے گا لیکن ایران نےعجلت اور جذبات میں آئے بغیر فیصلہ کیا۔

ایران کے صدر نے کہا کہ جب ایران نے یہ اعلان کیا کہ وہ اپنے یورپی ممالک، روس اور چین کی درخواست پر جوہری معاہدے کے تحفظ کے لئے انہیں ایک موقع دیتا ہے تو امریکی اور صیہونی حکام اور اسی طرح علاقے میں ایران کے بد خواہوں کے اوسان خطاء ہو گئے اور انہیں ایرانی قوم کی تدبیر کی ایسی کاری ضرب لگی کہ وہ اس کی فکر بھی نہیں کرتے تھے۔

صدرحسن روحانی نے کہا کہ جوہری معاہدے کے حوالے سے امریکہ کے نئے موقف کے خلاف ڈٹ جانےکے لئے تین آپشن موجود تھے یعنی امریکہ کے سامنے سر تسلیم خم کیا جائے، اندرونی اختلافات کے ساتھ امریکا کا مقابلہ کیا جائے اور اندرونی اختلافات کے بغیر اور قومی عزت و سربلندی کے ساتھ امریکہ کا مقابلہ کریں لیکن ایرانی قوم نے تیسرے آپشن یعنی اندرونی اختلافات کے بغیر اور قومی عزت و سربلندی کے ساتھ امریکہ کا مقابلہ کرنے کا انتخاب کیا اور ہم امریکہ کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کر دیں گے۔

 

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close