پاکستان

آرمی چیف کا دبنگ اعلان۔۔۔پاکستان کسی صورت اسرائیل کو تسلیم نہیں کرے گا

شیعیت نیوز: پاکستان کے سپہ سالار چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمرجاوید باوجوہ کے دبنگ اعلان سےپرنٹ ، الیکٹرونک اور سوشل میڈیا پر گردش کرتی پاکستان کی جانب سے اسرائیل کو تسلیم کرنے کی تمام افواہوں نے دم توڑ ڈالا ہے،جنرل باجوہ نے کہاکہ پاکستان کسی صورت اسرائیل سے تعلقات قائم کرےگا نا ہی اسرائیل کو تسلیم کرے گا، اسرائیل کو تسلیم کرنے کا جھوٹا پروپگینڈاحکومت، فوج اور عدلیہ کو بدنام کرنے کیلئے کیا گیا ، کوئی بھی مسلمان ،پاکستانی فوج یا حکومت اسرائیل کو تسلیم نہیں کرسکتی، آسیہ مسیح کے عدالتی فیصلے کا فوج سے کوئی تعلق نہیں،خادم رضوی نے وزیراعظم ، چیف جسٹس اور آرمی چیف کے خلاف بغاوت کا اعلان کیاہے جو کہ ناقابل برداشت ہے، علماء عوام اور فوج میں دوریاں پیدا کرنے کی سازش بے نقاب کرنے میں اپنا کردار ادا کریں، ان خیالات کا اظہار انہوں نے کورہیڈ کوارٹر کراچی میں مختلف مکاتب فکر کے علمائے کرام سے ختم نبوت اور پاکستان کی سالمیت کے عنوان پر منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

شیعیت نیوز کو ذرائع سے موصولہ تفصیلات کے مطابق جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہاکہ پاکستان کسی بھی صورت اسرائیل کو تسلیم نہیں کرے گا، ایسی افواہیں ملک کو بندنام کرنے اور اس کی سالمیت کو نقصان پہنچانے کیلئے شائع کی جاتی ہیں، پاکستان کے پاسپورٹ پر واضح الفاظ میں لکھا ہواہے کہ یہ پاسپورٹ ماسوائے اسرائیل کے تمام ممالک کے لئے کارآمد ہے تو جب ایک پاکستانی شہری اسرائیل کا سفر ہی نہیں کرسکتا تو اسرائیل کو تسلیم کرنا کیسے ممکن ہے، ایسی تمام افواہیں پاکستان کو بدنام کرنے کی سازش کا حصہ ہیں جس کا ہمیں مل کر مقابلہ کرنا ہوگا، بعض حکومتی اراکین کی جانب سے اسرائیل کے حوالے سے بیانات اور اسرائیل کو تسلیم کرنے کے جھوٹے پروپگینڈے پر وزیر اعظم کو واضح پیغام پہنچا چکے ہیں،پہلی بات تو یہ ہے کہ حکومت کو اسرائیل کو تسلیم کرنے کا کوئی ارادہ نہیں خدانا خواستہ اگر ایسا ہوا تو عمران حکومت سے مذاحمت کریں گے۔

انہوں نے کہاکہ پاکستان برادر اسلامی ممالک کے درمیان دوستانہ تعلقات کا خواہاں ہےاور ہم اپنی سرزمین کسی دوسرے مسلم ملک کے خلاف کسی کواستعمال کرنے کی ہرگز اجازت نہیں دیں گے ، آسیہ مسیح کے کیس کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ آسیہ مسیح کی رہائی کے عدالتی فیصلے کا فوج سے کوئی تعلق نہیں، مجھ پر قادیانی مسلک سے تعلق کا جھوٹا پروپگینڈا کیا جاتا ہے الحمد اللہ میں کلمہ گو مسلمان ہوں کوئی بھی غیرمسلم فوجی آفیسر پاک فوج میں ترقی پا کر اوپر تو آسکتا ہے لیکن آرمی چیف کے منصب پر فائض نہیں ہوسکتا ، آرمی چیف کی تقرری کے وقت ختم نبوت کے اقرار کا حلف نامہ تحریر کرنا پڑتاہے، انہوں نے کہاکہ میں خود ایک عاشق رسول ﷺ ہوں ناموس رسالت ﷺ پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرسکتا، لیکن کسی مظلوم کے ساتھ کوئی زیادتی بھی برداشت نہیں کرسکتا، اگر کسی پر توہین رسالت ﷺ ثابت ہے تو یہ عدالت کا کام ہے کہ وہ اس کے خلاف کروائی کرکے کسی شخص کو یہ اختیار حاصل نہیں

 

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close