کاپی رائٹ کی وجہ سے آپ یہ مواد کاپی نہیں کر سکتے۔
سعودی عرب

مدینہ میں ایک اور محسن ماں کی نگاہوں کے سامنے سعودی وہابی تکفیری انتہاپسندٹیکسی ڈرائیور کے ہاتھوں شہید

شیعیت نیوز: مدینہ منورہ میں ایک اور محسن کو اس کی ماں کے سامنے شہید کردیا گیا، مدینہ منورہ میں ایک چھ سالہ شیعہ زائر رسول خداؐ زکریاکو سعودی وہابی تکفیری انتہا پسندٹیکسی ڈرائیور نے بے دردی سے ذبح کردیا، مدینہ منورہ میں ذبح ہونے والے بچے زکریا کی خالہ نے بتایا کہ بروز بدھ ظہر کے وقت اس کی بہن جد ہ سے مسجد نبوی کی زیارت کیلئےآئی اور رھائش گاہ تک پہنچنے کیلئےسلطان بن عبدالعزیزروڈپر بس اسٹینڈ سے ایک ٹیکسی پر سوار ہوئی راستے میں زکریا بچے کوپیاس لگی اور اس نے ماں سے پانی طلب کیاتو اسکی ماں نے ایک جنرل اسٹور کے سامنے رکنے کو کہا تاکہ پانی خرید سکےاور بچے کو لیکر دکان پر پانی خریدنے گئی ماں نے سوار ہوتے وقت الحمد لله اور اللہم صلی علی محمد وآلہ کہا تو ڈرائیور نے پوچھا تم شیعہ ہو، اس نےہاں میںجواب دیا،ڈرائیور آگ بگولا ہوا اور ایک شیشہ توڑ کر اور بعض کے بقول چھری لیکر بچے کی جانب بڑھااور بچے کو پکڑ کر زمین پر لٹایا اور اللہ اکبر کہ کر ذبح کر دیا،ماں شور مچاتی رہی اور بچا ؤ بچاؤکی آوازیں لگاتی رہی لیکن اسکی کسی بھی راہگیریا دکانداروں نے کوئی مدد نہ کی،ششدر اور بے بس ماں جب بچے کو گود میں لیکردوڑی تو وہ درندہ اس کے پیچھے آکر پوچھ رھا تھا کہ بچہ مرا ہے یا نہیں، بچے کا تعلق سعودیہ کے شہر احساء کے قریب الشعبہ نامی علاقے سے ہے اور اسکی والدہ جدہ میں ملازمت کرتی تھی۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker