متفرقہ

عدالت نے تشیع کی تبلیغ کے الزام میں 9 مہینوں سے پابند سلاسل 6 شیعہ افراد کو باعزت بری کردیا


shiite_jordan-map

اردن کے سلامتی امور کی عدالت نے تشیع کی تبلیغ کے الزام میں 9 مہینوں سے پابند سلاسل 6 شیعہ افراد کو باعزت بری کردیا ہے۔ اردن کے سلامتی امور کی عدالت نے اعلان کیا ہے کہ یہ دعوی عدالت میں ثابت نہ ہوسکا ہے کہ اردن کے ان چھ باشندوں کا عمل جرم ہے چنانچہ انہیں کسی قسم کی سزاد نہیں دی جا سکتی اور انہیں بری کردیا جاتا ہے۔ یادرہے کہ اردن کی سیکورٹی ایجنسیوں نے گذشتہ موسم گرما میں چھ شیعہ باشندوں کو یہ کہہ کر حراست میں لیا تھا کہ یہ افراد تشیع کی تبلیغ میں مصروف تھے اور ملکی امن و امان کو تباہ کررہے تھے۔ یہ امر خاص

 طور پر قابل ذکر ہے کہ اردن میں بڑی تعداد میں شیعیان اہل بیت (ع) کی اچھی خاصی آبادی ہے مگر وہاں کے بظاہر سیکولر حکومت تشیع کے فروغ کی سخت خلاف ہے اور اہل تشیع کو مذہبی اعمال و مراسمات کی انجام دہی کی اجازت ہرگز نہیں دیتی؛ یہاں تک کہ شیعیان اردن نے گذشتہ سال اردن کے دارالحکومت امان میں حسینیہ تعمیرکرنے کی نیت سے زمین خریدی تھی مگر حکومت نے ان کے اس منصوبے کی مخالفت کی اور حسینیہ کی تعمیر کا منصوبہ کامیاب نہ ہوسکا۔

 

Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close