اہم ترین خبریںسعودی عرب

آل سعود کی سخت دھمکیوں کے باوجود عزاداری کا سلسلہ جاری

شیعیت نیوز : سعودی عرب کے شیعہ اکثریتی علاقوں میں آل سعود کی سخت دھمکیوں کے باوجود عزاداری کا سلسلہ جاری ہے۔

رپورٹ کے مطابق سعودی عرب کے شیعہ علاقے القطیف اور الاحسا میں آل سعود کی سخت دھمکیوں کے باجود عاشقان امام حسین علیہ السلام مجالس عزاداری بپا کررہے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ مشرقی سعودی عرب میں شیعہ اکثریتی علاقے القطیف کے عوام آل سعود کی سخت دھمکیوں کے باوجود مساجد اور امام بارگاہوں میں مجالس عزا برگزار کررہے ہیں۔ مساجد اور امام بارگاہوں کے سامنے سڑکوں پر بھی مجالس عزا کا پروگرام جاری ہے۔

یہ بھی پڑھیں : لبنان: امریکہ خطے میں جنگ کی آگ بھڑکا رہا ہے، اسرائیلی ڈرون مار گرایا

عزادار کورونا وائرس سے محفوظ رہنے کے لئے احتیاطی تدابیرپر سختی سے عمل کررہے ہیں اور سماجی فاصلے اور ماسک وغیرہ کا استعمال یقینی بنایا جارہا ہے۔

نبا نیوز کے مطابق، سعودی حکام نے عاشقان امام حسین علیہ السلام کو عزاداری سے منع کرتے ہوئے دھمکی دی تھی کہ ملک بھر میں مجالس پر پابندی ہے خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

مشرقی سعودی عرب کے علاقے العوامیہ کے عوام بھی آل سعود کی جانب سے شدید خطرات کے باوجود عزاداری سید الشہدا امام حسین علیہ السلام میں مصروف ہیں۔ عزادار دھکمیوں کو خاطرمیں لائے بغیرمجالس برگزار کررہےہیں۔

دوسری جانب سعودی وزارت صحت کے ترجمان کے مطابق سعودی عرب میں کورونا کے مریضوں کی تعداد 3 لاکھ7 ہزار 479ہوگئی ہے۔سعودی عرب میں کورونا کے مزید 1109مریضوں کی تصدیق ہوئی ہے۔

ترجمان وزارت صحت نے مزید کہا کہ سعودی عرب میں 24 گھنٹوں میں کورونا سے 30افراد انتقال کرگئے ہیں۔ جس کے باعث مملکت میں کورونا سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 3649ہوگئی ہے۔

سعودی عرب میں کورونا سے متاثر 3 لاکھ سے زائد افراد میں سے2 لاکھ80 ہزار 143سے زیادہ صحت یاب ہو گئے ہیں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close