اہم ترین خبریںپاکستان

اب خطے کے ممالک امریکا کے بجائےایران کیساتھ تعلقات میں اپناتحفظ دیکھیں گے، علامہ عابد الحسینی

حال ہی میں ملائیشیاء کانفرنس میں شرکت نہ کرکے عمران نے اقوام متحدہ کے اجلاس کے دوران بنائے جانے والی شخصیت بھی خاک میں ملا دی۔

شیعت نیوز: تحریک حسینی پاراچنار کے سرپرست اعلیٰ اور سابق سینیٹرعلامہ سید عابد حسین الحسینی کا کہنا تھا کہ حملے اور جوابی حملے کے بعد امریکہ کا اثر و رسوخ علاقے میں کم ہوگیا ہے، یہ ممالک اب امریکہ کے ساتھ تعلقات کو اپنے لئے خطرہ تصور کریں گے، جبکہ وہ امریکہ کی بجائے ایران کے ساتھ اپنے تعلقات بہتر کرنے کی سعی کریں گے اور کسی بھی ملک کی نسبت وہ ایران سے کمک طلب کرنے کو ترجیح دینگے۔ دنیا بھر کی مظلوم اور محروم اقوام بالخصوص امریکہ کے ہاتھوں پٹی اور ستم دیدہ اقوام اپنی نجات اور اپنا تحفظ ایران کے ساتھ تعلقات میں ڈھونڈیں گی۔

یہ بھی پڑھیں: 1920برطانیہ دفع ہوجاؤ۔۔2020امریکا دفع ہوجاؤ۔۔۔۔عراق کا فلک شگاف اعلان

ایک انٹرویو میں ان کا کہنا تھا کہ ہمارے سیاستدان اقتدار میں آنے سے پہلے ہمیشہ آزاد خارجہ پالیسی کا نعرہ لگاتے ہیں۔ وہ اپنے مدمقابل کو امریکہ کا غلام گردانتے نہیں تھکتے۔ اقتدار میں آنے سے قبل عمران خان سے لوگوں کی کافی امیدیں وابستہ تھیں کہ یہ آکر امریکہ کو ہمیشہ کیلئے خیرباد کہہ دینگے۔ مگر اس نے امریکہ اور اس کے دیگر غلاموں کی غلامی کے سابقہ تمام ریکارڈ توٖڑ ڈالے۔ ہماری حکومت کی پالیسی کے حوالے سے اتنا کہوں گا کہ یہ غلام نہیں بلکہ غلاموں کی غلام ہے۔

یہ بھی پڑھیں: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کشمیر پرثالثی نھیں بھارت کی سہولتکاری کر رہا ہے،سردار ظفر حسین

انہوں نے کہاکہ عمران صاحب اپنے مفادات کے لئے ہر زہر مار کھانے کے لئے تیار ہو جائیں گے۔ ہماری حکومتوں کی تاریخ ہی ایسی رہی ہے۔ ہم نے اسامہ کے حوالے سے کیا کیا؟ کہ ایک فون کال پر ہماری حکومت وقت ڈھیر ہوگئی۔ یمن اور سعودی عرب کے حوالے سے ہم نے کیا کیا؟ اور اب تک کیا کر رہے ہیں؟ حال ہی میں ملائیشیاء کانفرنس میں شرکت نہ کرکے عمران نے اقوام متحدہ کے اجلاس کے دوران بنائے جانے والی شخصیت بھی خاک میں ملا دی۔ چنانچہ امریکہ ایران کشیدگی کے دوران ایک جانب اقتصادی مجبوری، دوسری جانب امریکہ کے ساتھ ہمارے کچھ تاریخی تعلقات اور رشتے، ہمیں اپنا شرعی فریضہ ادا کرنے کی بجائے اپنے تاریخی آقاوں کے گود میں بٹھانے پر مجبور کرینگے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close